خودکش دھماکہ کے دوسرے روز بھی ڈیرہ کی فضا سوگوار رہی

خودکش دھماکہ کے دوسرے روز بھی ڈیرہ کی فضا سوگوار رہی

  



ڈیرہ اسماعیل خان (بیورورپورٹ)پولیس چیک پوسٹ پر دہشتگردوں کے حملے اور ہسپتال ایمرجنسی خودکش دھماکے کے واقعات کے دوسرے روز بھی ڈیرہ کی فضا سوگوار رہی، پولیس و سول شہداء کی آبائی علاقوں میں تدفین کر دی گئی، ڈسٹرکٹ بار ڈیرہ کے وکلاء کی واقعہ کے سوگ میں ہڑتال، سی ٹی ڈی پولیس نے دہشتگردی، دھماکہ خیز مواد رکھنے اور قتل و اقدام قتل سمیت دیگر دفعات کے تحت نامعلوم دہشتگردوں کیخلاف مقدمات درج کرلئے۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز تھانہ ڈیرہ ٹاؤن کی حدود میں کوٹلہ سیداں چیک پوسٹ پر نامعلوم دہشتگردوں کے حملے میں دو پولیس اہلکاروں کی شہادت اور بعدازاں ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ٹیچنگ ہسپتال ٹراما سنٹر میں ہونیوالے خودکش دھماکے میں شہید ہونیوالے دو پولیس اہلکاروں اور دیگر 5شہریوں کی نماز جنازہ ان کے آبائی علاقوں میں اداکرنے کے بعد ان کی تدفین کردی گئی۔ یکے بعد دیگرے ہونیوالے دہشتگردی کے واقعات کے دوسرے روز بھی شہر کی فضا سوگوار رہی، شہر میں بازار اور تجارتی مراکز تو کھلے رہے تاہم کاروباری سرگرمیاں مانند رہیں۔ڈسٹرکٹ بار ڈیرہ کی جانب سے دہشتگردی کے واقعات میں پولیس اہلکاروں اور معصوم شہریوں کی شہادت پر دکھ کا اظہار کیااور ان واقعات کی شدید االفاظ میں مذمت کی، ڈسٹرکٹ بار کی جانب سے یوم سوگ منایا گیا اور مکمل ہڑتال کی گئی، وکلاء برادری کی جانب سے مرکزی اور صوبائی حکومتوں سے شہداء اور زخمیوں کی فوری امداد اور دہشتگردی میں ملوث عناصر کے قلع قمع کیا مطالبہ کیا گیا۔ دوسری جانب سی ٹی ڈی پولیس نے کوٹلہ سیداں چیک پر دہشتگروں کے حملے کا مقدمہ نامعلوم دہشتگردوں کیخلاف ایس ایچ او تھانہ ڈیرہ ٹاؤن محمد اصغر کی مدعیت میں زیر دفعہ 302, 353, 404-34اور7ATA کی دفعات جبکہ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ٹیچنگ ہسپتال ٹراما سنٹر خودکش دھماکے کا مقدمہ ایس ایچ او تھانہ کینٹ عبدالرحیم گنڈہ پور کی مدعیت میں نامعلوم دہشتگردوں کیخلاف زیر دفعات302, 324, 120B, 427 اور7ATAکے تحت درج کرلیا ہے۔ ادھر ہسپتال ذرائع کے مطابق گزشتہ روز ہونیوالے خود کش دھماکے میں زخمی نوجوانسید زین عباس زیدی ولد سید ممتاز حسین زیدی مرحوم کو تشویشناک حالت کے باعث پمز ہسپتال اسلام آباد ریفر کردیا گیا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر