کوہاٹ،نانبائیوں نے ایک روزہ ہڑتال کے بعد روٹی کی قیمت بڑھا دی

کوہاٹ،نانبائیوں نے ایک روزہ ہڑتال کے بعد روٹی کی قیمت بڑھا دی

  



کوھاٹ (بیورو رپورٹ) کوھاٹ میں نانبائیوں نے ایک روزہ ہڑتال کر کے از خود روٹی کی قیمت میں اضافہ کر دیا ضلعی انتظامیہ لمبی تان کر سو گئی عوام مہنگائی کی چکی میں پیسنے لگے انتظامیہ کی بے حسی اور غفلت پر غریب لوگ ماتم کرنے لگے تفصیلات کے مطابق کوھاٹ کے نانبائیوں نے صوبہ بھر کی طرح ایک روزہ ہڑتال کی جس کا مقصد روٹی کی قیمت میں اضافہ کرنا تھا پشاور کی ضلعی انتظامیہ نے غریب عوام کا احساس کیے بغیر نانبائیوں کے مطالبے کے آگے گھٹنے ٹیک دیئے اور روٹی کی قیمت میں 5 روپے اضافے کے ساتھ 50 گرام وزن بڑھانے کا اعلامیہ جاری کر دیا جس پر کوھاٹ کے نانبائیوں نے بھی قیمت میں پانچ روپے کا اضافہ تو کر دیا مگر وزن 140 گرام سابقہ برقرار رکھا گیا اس حوالے سے ضلعی انتظامیہ لمبی تان کر سو گئی اور عوام کو نانبائیوں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا اور پشاور کی ضلعی انتظامیہ کے اعلامیہ پر ہی قیمت کے لحاظ سے اکتفا کیا گیا مگر کوئی اعلامیہ جاری کرنے کی زحمت اس لیے گوارہ نہیں کی گئی کہ اسے کھلی کچہریوں کے رسمی انعقاد سے فرصت ہی نہیں تھی اور دفتر کے یخ بستہ کمروں نے غریبوں کی آہ و بکا سننے سے انہیں روکے رکھا کوھاٹ کے عوامی‘ سماجی اور کاروباری حلقوں نے ضلعی انتظامیہ کی اس بے حسی پر شدید مایوسی اور غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے اسے عوام دشمنی پالیسی سے تعبیر کیا اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ انہیں سرکاری فرائض میں رسمی کارروائی کے بجائے حقیقی معنوں میں عوامی خدمت کا پابند کیا جائے اور غفلت کا مظاہرہ کرنے پر ان کی جواب طلبی کی جائے تاکہ عوام کو ریلیف مہیا ہو اور نانبائیوں کی من مانی کا خاتمہ ہو۔ 

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...