منشیات سمگلنگ کیس، اے این ایف نے رانا ثنا اللہ کو قصور وار قرار دے دیا

منشیات سمگلنگ کیس، اے این ایف نے رانا ثنا اللہ کو قصور وار قرار دے دیا
منشیات سمگلنگ کیس، اے این ایف نے رانا ثنا اللہ کو قصور وار قرار دے دیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)اینٹی نارکوٹکس فورس( اے این ایف) حکام نے منشیات سمگلنگ کیس میں ن لیگ کے رہنما رانا ثنا اللہ کو قصور وار قراردیدیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق اے این ایف حکام نے لیگی رہنما رانا ثنا اللہ کےخلاف عدالت میں چالان جمع کرا دیا، تفتیش میں لیگی رہنما کو قصور وار قرار دے دیا۔ رانا ثنا اللہ منشیات کیس میں اے این ایف کی حکم پر پنجاب پولیس کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ان کے مبینہ 4 فرنٹ مینوں کے خلاف 9 مقدمات درج ہیں۔پولیس کی رپورٹ کے مطابق پرویز اختر الیاس کے خلاف 13/20/65 کا مقدمہ درج ہو چکا ہے جبکہ شمو مسیح کے خلاف منشیات کا مقدمہ پہلے بھی درج ہے۔رپورٹ کے مطابق رانا اظہر کےخلاف سمن آباد اور فیکٹری ایریا فیصل آباد میں 6 مقدمات درج ہیں جبکہ عمران ولد دولت خان کے خلاف بھی مقدمہ درج ہے۔پنجاب پولیس نے ایم پی اے طاہر خلیل سندھو کو کلیئر قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایم پی اے طاہر خلیل سندھو کے خلاف کوئی مقدمہ درج نہیں ہے۔ آر پی او فیصل آباد کی جانب سے رپورٹ تیار کر کے اے این ایف کو بھجوا دی گئی ہے۔چالان جمع ہونے کے بعد منشیات سمگلنگ میں گرفتار رانا ثنا اللہ کے ٹرائل کا بھی باقاعدہ آغاز ہو گیا ہے، اے این ایف کے جج مسعود ارشد نے ملزم کو 29 جولائی کو طلب کرلیا، اے این ایف نے لیگی رہنما کی گاڑی سے ہیروئن برآمد کی تھی، رانا ثنا اللہ سمیت 5 افراد پر مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...