نواز شریف کے بھتیجے یوسف عباس کی نیب میں پیشی،اندرونی کہانی سامنے آ گئی

نواز شریف کے بھتیجے یوسف عباس کی نیب میں پیشی،اندرونی کہانی سامنے آ گئی
نواز شریف کے بھتیجے یوسف عباس کی نیب میں پیشی،اندرونی کہانی سامنے آ گئی

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور کی طلبی کے نوٹس پر سابق وزیر اعظم نواز شریف کے بھیجتے یوسف عباس مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے رو برو  پیش ہو گئے،نیب ٹیم کے بعض سوالوں پر یوسف عباس پریشان ہو گئے،پیشی کی اندرونی کہانی بھی سامنے آ گئی۔

نجی ٹی وی کے مطابق نیب ٹیم کے سامنے پیش ہونے پر یوسف عباس نے چوہدری شوگر ملز کے حوالے سے پوچھے جانے والے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ وہ ایک کاروباری خاندان سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ ان کے والد بھی کاروبار سے وابستہ تھے،یوسف عباس سے پوچھا گیا کہ چوہدری شوگر ملز میں آپ کب سے شیئر ہولڈر ہیں ؟جس پر انہوں نے بتایا کہ 1995سے شیئرز ہولڈر ہیں اور باقاعدہ سے ٹیکس جمع کراتے ہیں جبکہ ان کے تایا نواز شریف کیصاحبزادی مریم نواز بھی ایک کروڑ شیئرز کی مالک ہیں، نیب کی جانب سے شوگر کی برآمد اس کی مد میں رقم کی وصولی کے طریق کار،بینک اکاؤنٹس کے بارے میں بھی سوالات کئے گئے۔ذرائع کے مطابق یوسف عباس سے شمیم شوگر مل میں سرمایہ کاری اور قرض کے حوالے سے بھی استفسار کیا گیا ہے اورٹی ٹی کی صورت میں موصول یا بھیجی جانے والی رقوم اورمختلف کمپنیوں کو دئیے جانے والے قرض کے حوالے سے بھی سوالات پوچھے گئے۔ذرائع کے مطابق یوسف عباس نے بعض سوالات کے بارے میں ریکارڈ سے دیکھ کر جواب دینے کی مہلت طلب کی جس کے بعد انہیں سوالنامہ بھی دیا گیا جس کے بعد وہ نیب آفس سے رخصت ہو گئے ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور