’میں امریکی امداد کو لعنت سمجھتا ہوں، ہمیں اس کی کوئی ضرورت نہیں‘

’میں امریکی امداد کو لعنت سمجھتا ہوں، ہمیں اس کی کوئی ضرورت نہیں‘
’میں امریکی امداد کو لعنت سمجھتا ہوں، ہمیں اس کی کوئی ضرورت نہیں‘

  



واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ہمیں امداد کی کوئی ضرورت نہیں ہے کیونکہ یہ ہمارے لیے سب سے بڑی لعنت تھی ، جس طرح اسامہ بن لادن کے وقت امریکہ نے پاکستان میں کارروائی کی ہم ایسی صورتحال دوبارہ نہیں چاہتے ۔

امریکن انسٹی ٹیوٹ آف پیس میں سوالوں کے جوابات کے سیشن کے دوران وزیر اعظم سے امریکی امداد کے حوالے سے سوال پوچھا گیاتو اس پر عمران خان نے کہا کہ ہمیں امداد کی کوئی ضرورت نہیں ہے بلکہ ہماری بات کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ میں باہمی مفادات اور برابری کی سطح پر دوستانہ تعلقات چاہتا ہوں۔ پہلے پاکستان امریکہ سے امداد چاہتا تھا اور امریکہ پاکستان سے ڈو مور کا مطالبہ کیا کرتا تھا لیکن اب ایسی صورتحال نہیں ہے۔ اپنے دورہ امریکہ کی وجہ سے میں اس لیے خوش ہوں کہ ہمارے تعلقات باہمی نوعیت کے ہوگئے ہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ انہیں اس بات سے نفرت ہے کہ کسی سے امداد مانگی جائے کیونکہ ماضی میں امریکی امداد پاکستان کیلئے سب سے بڑی لعنت تھی، یہ بہت ہی شرمناک ہے کیونکہ کوئی بھی ملک خود داری کی بنا پر اوپر اٹھتا ہے، کوئی ملک امداد اور بھیک سے آگے نہیں جاسکتا۔

انہوں نے کہا کہ انہیں اس وقت اپنی زندگی میں سب سے زیادہ شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا جب اسامہ بن لادن کو امریکہ نے پاکستان میں گھس کر مارا۔ بطور اتحادی ہر پاکستانی کیلئے یہ شرم کا مقام تھا کہ اس کا اتحادی اس پر اعتماد کرنے کو تیار نہیں ہے، ہم دوبارہ ایسی صورتحال نہیں چاہتے ، ہم چاہتے ہیں کہ برابری کی سطح پر باوقار تعلقات ہوں۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی