پنجاب میں گڈ گورننس کیلئے وزیراعلیٰ کی تبدیلی ضروری ہے،سلمان پرویز

پنجاب میں گڈ گورننس کیلئے وزیراعلیٰ کی تبدیلی ضروری ہے،سلمان پرویز

  

لاہور(پ ر) انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی سینئر نائب صدر سلمان پرویز نے کہا ہے کہ ملک میں نظام کی تبدیلی اوربالخصوص پنجاب میں گڈگورننس کیلئے وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدار کوتبدیل کر ناہوگا۔ پی ٹی آئی کے کپتان عمران خان منتخب وزیراعظم کی بجائے کسی شہنشاہ کی طرح فیصلے کررہے ہیں۔پی ٹی آئی کے اپنے اہم لوگ بزدار سے نجات کے خواہاں ہیں لیکن واحدعمران خان کسی بردبار کووزیراعلیٰ پنجاب بنانے کیلئے تیار نہیں ہورہے۔

۔2018ء کے انتخابات سے صرف چہرے بدلے نظام کی تبدیلی آج بھی ایک خواب ہے۔اپنے ایک بیان میں سلمان پرویز نے مزید کہا کہ پاکستان کے سیاستدانوں میں اقتدارکی ہوس نے معاشرتی اورجمہوری اقدارکاجنازہ نکال دیا۔پاکستان کاہرسیاستدان نجات دہندہ کی بجائے وزیراعظم بنناچاہتا ہے۔انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کومضبوط اورمحفوظ بنانے کیلئے افرادنہیں اداروں کی مضبوطی اہم ہوتی ہے، سیاستدانوں کااپنے تنازعات میں افواج پاکستان کوگھسیٹناشرمناک،ناقابل فہم اورناقابل برداشت ہے۔نظریہ ضرورت کے تحت متحدہونیوالے سیاستدان رہبرنہیں رہزن ہیں۔انہوں نے کہا کہ ڈھیل اورڈیل کی سیاست کوسمندربرد کرنے کاوقت آگیاہے۔سیاستدانوں کوبلیم گیم میں مزاآتا ہے اسلئے جان بوجھ کر عوامی ایشوز پرفوکس نہیں کیا جاتا،عوام آئندہ انتخابات میں اس فرسودہ نظام کومنطقی انجام تک پہنچادیں گے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ نظام کے تحت قومی مجرموں کااحتساب ہوگااورنہ پاکستان میں شفاف الیکشن ہوسکتے ہیں کیونکہ یہ جمہوریت صرف سرمایہ داروں کوراس آئی ہے۔ پاکستان میں رائج نام نہادجمہوریت کاہر راستہ اور ضابطہ ہماری اسلامی تعلیمات اوراخلاقیات سے متصادم ہے،ملک میں صدارتی طرزحکومت آزمایاجائے۔انہوں نے کہا کہ عوام کوناخواندہ اورپسماندہ رکھنا سرمایہ دارسیاستدانوں اوروڈیروں کی ضرورت ہے کیونکہ اگرعام آدمی کوسیاسی شعورآگیا تو ان کی بادشاہت ختم ہوجائے گی۔ انہوں نے کہا کہ عوام اپنی مرضی ومنشاء سے اپنے مستقبل اورمقدر کے فیصلے کرنے کیلئے اپنی کلاس میں سے مخلص قیادت تلاش کر یں ورنہ ان کی غلامی کاسیاہ دورکبھی ختم نہیں ہوگا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -