بدلتے عالمی حالات درپیش چیلنجز کے پیش نظر بہترین حکمت عملی بنانا ناگزیر:شاہ محمود قریشی

بدلتے عالمی حالات درپیش چیلنجز کے پیش نظر بہترین حکمت عملی بنانا ناگزیر:شاہ ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، نیوز ایجنسیاں) وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ ہمیں خارجہ محاذ پر درپیش چیلنجز کو سامنے رکھتے ہوئے بین عالمی سطح کی تحقیق کو منظرعام پر لانا ہوگا، بدلتی ہوئی علاقائی صورتحال خصوصی توجہ کی متقاضی ہے، ایسے حالات میں ہمیں بہترین حکمت عملی وضع کرنا ہو گی، اکیسویں صدی کو ایشیاء کی صدی کہا جاتا ہے جہاں چین ایک بڑی معاشی طاقت کے طور پر ابھر کر سامنے آ رہا ہے ہمیں اس حوالے سے بھی چین کیساتھ مل کر کثیرالجہتی شعبہ جات میں تعاون کے فروغ اور علاقائی استحکام کیلئے اپنی توجہ مرکوز کرنا ہو گی۔بدھ کو وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے اسلام آباد میں واقع انسٹیٹیوٹ آف ریجنل اسٹڈیز کا دورہ کیا، سیکرٹری خارجہ سہیل محمود اور وزارت خارجہ کے سینئر افسران بھی وزیر خارجہ کے ہمراہ تھے، پریزیڈنٹ آئی آر ایس ایمبیسڈر ندیم ریاض نے وزیر خارجہ کا خیر مقدم کیا، وزیر خارجہ نے انسٹیٹیوٹ آف ریجنل اسٹڈیز کی نئی عمارت کا افتتاح کیا اور وزیٹر بک میں اپنے تاثرات قلمبند کئے، اس موقع پر وزیر خارجہ نے اپنے خطاب میں کہا آج انسٹی ٹیوٹ آف ریجنل اسٹڈیزکی ذمہ دار یو ں میں کئی گنا اضافہ ہوچکا ہے،ہمیں خارجہ محاذ پر درپیش چیلنجز کو سامنے رکھتے ہوئے بین عالمی سطح کی تحقیق کو منظرعام پر لانا ہوگا، ادارے کو مزید فعال بنانے کیلئے ہر ممکن کوشش اور وسائل برو ئے کار لا ئیں گے۔ وزیر خارجہ نے انسٹیٹیوٹ کے مختلف شعبوں کا دورہ بھی کیا اور پریذیڈنٹ انسٹیٹیوٹ کی کارکردگی کو سراہا۔قبل ازیں متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کے وزیر خارجہ شیخ عبداللہ بن زید النہیان نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے ٹیلیفونک رابطہ کیا جس میں کورونا وبائی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ بدھ کو جاری اعلامیہ کے مطابق اماراتی وزیر خارجہ نے پاکستانی ہم منصب کو روبصحت ہونے پر مبارکباد دی اور نیک خواہشات کا اظہار کیا،جس پر شاہ محمود نے شکریہ ادا کیا اور متحدہ عرب امارات میں کوروناپر قابو پانے کی کاوشوں کو سراہا۔وزیر خارجہ نے امارا تی ہم منصب کو پاکستان میں کوروناکے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے اقدامات سے بھی آ گاہ کیا اور متحدہ عرب امارات کی پاکستان کیلئے طبی معاونت کی فراہمی پر خصوصی شکریہ ادا کیا۔وزیر خارجہ نے متحدہ عرب امارات کی طرف سے مریخ کیلئے بھجوائے گئے پہلے خلائی مشن پر مبارکباد دیتے ہوئے اسے بڑی کامیابی قرار دیا۔اماراتی وزیر خارجہ نے کہا متحدہ عرب امارات، بین الاقوامی تعاون کیساتھ کورونا ویکسین کی تیاری میں مصروف عمل ہے اور انشاء اللہ جلد کامیابی کیلئے پرامید ہیں۔ اعلامیہ کے مطابق دونوں وزرائے خارجہ نے صورتحال معمول پر آنے کے بعد جلد ملاقات پربھی اتفاق کیا۔بعدازاں اپنی زیر صدارت و زارت خارجہ میں خطے میں امن و امان کی صورتحال کے حوالے سے اجلاس ہوا جس میں وزیر اعظم کے معاون خصوصی قومی سلامتی معید یوسف، سیکرٹری خارجہ سہیل محمود، اعلی عسکری حکام اور وزارت کے سینئر افسران نے شرکت کی،اس موقع پر خطاب میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا بھارت کی ہندتوا سوچ اور جارحانہ پالیسیوں کے باعث پورے خطے کے امن و استحکام کو شدید خطرات لاحق ہیں،بھارت، مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں اور اپنی داخلی کمزوریوں پر پردہ ڈالنے کیلئے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزیوں کے ذریعے عام شہریوں کو نشانہ بنا رہا ہے،نہتے کشمیریوں کو بھارتی استبداد سے نجات دلانے کیلئے عالمی برادری کو اپنا موثر کردار ادا کرنا ہوگا۔اجلاس میں مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری بھارتی جارحیت اور خطے میں امن و امان کی مجموعی صورتحال کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال بھی کیا گیا۔بھارت سرکار کے مقبو ضہ وادی میں 5 اگست کے یکطرفہ عالمی قوانین کے منافی اقدامات سے دنیا کو آگا ہ اورمختلف تجاویز پر غورجبکہ افغان امن عمل سمیت علاقائی سلامتی کے مختلف امور پر مشاورت کی گئی۔

مزید :

صفحہ اول -