عازمین کی تعداد مزید محدود،1000خوش نصیب حج کی سعادت حاصل کرینگے

عازمین کی تعداد مزید محدود،1000خوش نصیب حج کی سعادت حاصل کرینگے

  

لاہور(رپورٹ، میاں اشفاق انجم) حج 2020ء مزید محدود، 10ہزار کی بجائے اب صرف ایک ہزار خوش قسمت افراد حج کی سعادت حاصل کریں گے۔ حج کرنیوالوں میں پاکستان سمیت دینا بھر کے سفارت خانوں کے افراد بھی شامل نہیں ہوں گے۔ اس سال صرف میڈیکل اور سیکورٹی اداروں کے لوگ حج کریں گے۔ میڈیکل سے تعلق رکھنے والوں میں مختلف نیشنیلٹی ہولڈر شامل ہیں۔ جو سعودی عرب کے مختلف اداروں میں ذمہ داریاں ادا کر رہے ہیں ایک ہزار افراد میں ڈاکٹرز،نرسز، پیرا میڈیکل سٹاف کے ممبران شامل ہیں اسی طرح سیکورٹی اداروں اور ایجنسیوں کے افراد کی بڑی تعدادبھی شامل ہیں۔ ایک ہزار افرادکیلئے 40بسوں کو اجازت نامے جاری کیے گئے ہیں۔ یادرہے اس سال کرونا کی وجہ سے حج کو محدود کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔پہلے تعداد 10ہزار افرادکی طے کی گئی تھی بعدازاں ایک ہزار تک محدود کر دیا گیا ہے حج 2020ء کی رجسٹریشن کے لیے سعودی ویب سائٹ پر جو شرائط دی گئی تھیں۔ ان میں پہلی شرائط یہ تھیں۔ شوگر، بلڈ پریشر، دل اورکروناکا مریض نہ ہو، عمر 20سال سے 50سال کے درمیان ہو۔ سب سے سخت شرط تھی کہ درخواست دینے والے نے پہلے حج نہ کیا ہو دلچسپ امر یہ ہے ایک ہزار سے زائد افراد کے لیے منیٰ،عرفات، مزدلفہ میں تیاریاں مکمل کر لی گئیں ہیں۔ خطبہ حج مسجد نمرہ میں ہی ہو گا۔ حج 2020ء کے لیے نامزد افراد کے نام ابھی تک راز میں رکھے گئے ہیں۔ خانہ کعبہ کے حوالے سے طواف، سعی کہاں ہو سکے گی سمیت باب عبدالعزیز کھولنے کے حوالے سے فیصلے 4ذوالحج تک متوقع ہیں، منی ٰ، عرفات، مزدلفہ اور منیٰ کے رہائشی ٹاور میں اہلکاروں نے ذمہ داریاں سنبھال لیں۔ مکہ مکرمہ کے مقامات مقدسہ میں داخلہ بند کر دیا گیا ہے۔

حج محدود

مزید :

صفحہ اول -