تاجروں کو سہولیات،کاروبار میں آسانیاں فراہم کرنا حکومت اولین ترجیح:ارباب شہزاد

  تاجروں کو سہولیات،کاروبار میں آسانیاں فراہم کرنا حکومت اولین ترجیح:ارباب ...

  

اسلام آباد(آئی این پی) وزیر اعظم کے معاون خصوصی ارباب شہزاد نے کہا کہ تاجروں کو سہولیات اور کاروبارمیں آسانیاں فراہم کرنا موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ عالمی وبا کورونا وائرس کی وجہ سے تاجروں اورکاروباری شخصیات کے مفادات کو نقصان پہنچایا، چمن باڈر سے ملحقہ علاقوں کی آباد ی براہ راست متاثر ہوئی ہے۔ برآمد اور درآمد کنندگان کو سہولیات کی فراہمی سے افغانستان اور پاکستان کے مابین تجارت میں اضافہ ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز پارلیمنٹ ہاس میں چمن بارڈر کی بندش اور چمن باڈر سے ملحقہ علاقوں کے عوام کو درپیش مشکلات کے سلسلے میں منعقدہ اجلاس کے شرکا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اجلاس کے شرکا نے چمن بارڈر اور اس کے ملحقہ علاقوں کے تاجروں کو درپیش مسائل کے حوالے سے صوبائی حکام سے رابطہ کرنے کی تجویز پیش کی۔اجلاس میں مقامی لوگوں کو سہولیات کی فراہمی کیلئے صوبائی و ضلعی حکام سے رابطہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں ممبران قومی اسمبلی محترمہ شندانہ گلزار، محسن داوڑ، علی وزیر، محمد صادق، محترمہ نفیسہ عنایت اللہ خٹک اور وزارت تجارت، داخلہ، صحت اور وزارت خزانہ کے اعلی افسران بھی مو جود تھے۔پاک افغان پارلیمانی فرینڈشپ گروپ کی ٹاسک فورس ٹریکنگ ایند اسکیننگ آف کنٹینر ز نے کنٹینرز کی اسکیننگ سے متعلق تبادلہ خیال کرتے ہوے کہا سکیننگ اور ٹریکنگ کا عمل پاک،افغان تجارت کی میں رکاوٹ نہیں بننا چاہیے،انہوں نے افغانستان بارڈر پر برآمد اور درآمد کنندگان کی سہولیات کیلئے کنٹینرز کی اسکیننگ کو بین الاقوامی معیار کے مطابق بنانے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ وزیر اعظم کے خصوصی ایلچی برائے افغانستان محمد صادق خان بتایا پاکستان اور افغانستان دونوں باہمی تجارت سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ اسکیننگ کے عمل میں تاخیر سے کنٹینرز میں موجود سامان خراب ہونے کا خدشہ ہوتا ہے۔ ٹاسک فورس کے شرکا نے کہا دونوں ممالک کے عوام کی خوشحالی کیلئے دوطرفہ تجارت ضروری ہے۔سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کے اقدام کی تعریف کرتے ہوئے کہا وہ پارلیمنٹ کے فعال کردار پر یقین، تاجروں اور کاروباری طبقے خصوصا افغانستان کیساتھ تجارت کی راہ میں درپیش مسائل کو حل کرنے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں۔

ارباب شہزاد

مزید :

صفحہ آخر -