یو ایم ٹی کے زیر اہتمام عالمی ای کانفرنس کا انعقاد

  یو ایم ٹی کے زیر اہتمام عالمی ای کانفرنس کا انعقاد

  

لاہور (پ ر) یو نیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی (یو ایم ٹی)کے انسٹیٹیوٹ آف کلینیکل سائیکولوجی کے زیر اہتمام" کرونا وائرس اور بدلتے ہوئے افک " پر پہلی بین الاقوامی ای کانفرنس منعقد کی گئی۔ کانفرنس سے پہلے 15 سے زائد ورکشاپس کا بھی انعقاد کیا گیا جس میں 500 سے زائد شرکاء نے شرکت کی۔ اس کانفرنس کا مقصد قومی و بین الاقوامی مفکرین و پیشہ ورانہ افراد کے ساتھ Covid-19 کی موجودہ صورتحال کے حوالے سے چیلنجز اور مسائل پر روشنی ڈا ل کر انکا حل تلاش کرنا تھا۔نامور قومی و بین الاقوامی سکالرز، ماہرین و مقررین ریکٹر یو ایم ٹی ڈاکٹر محمد اسلم، فلپائینز کے ڈاکٹر مارشلے، امریکہ کی جارج میسن یو نیورسٹی کی ڈاکٹر ربیکہ فوکس اور ڈاکٹر آنیہ، کینیڈا سے ڈاکٹر سجاد احمد،کراچی سے ڈاکٹر قدسیہ طارق،ڈائریکٹر انسٹیٹیوٹ آف کلینیکل سائیکولوجی پنجاب یو نیورسٹی ڈاکٹر رافیہ رفیق، ڈائریکٹر انسٹیٹیوٹ آف کلینیکل سائیکولوجی یو ایم ٹی ڈاکٹر سادیہ،ڈاکٹر ارم بخاری، یو ایم ٹی کے ڈاکٹر رفیق اور ڈاکٹر زاہد محمود،اٹلی سے ڈاکٹر عجاز الحق،ڈاکٹر ارم منصور (CMH,Lhr)، گورنمنٹ کالج یونیوسٹی لاہور سے ڈاکٹر سلمہ حسن سمیت دیگر ماہرین نے اس ای کانفرنس میں بھر پور شرکت کی۔ ڈائریکٹر انسٹیٹیوٹ آف کلینیکل سائیکولوجی یو ایم ٹی ڈاکٹر سادیہ نے تمام معززممانوں اور شر کاء کا یو ایم ٹی کانفرنس میں شرکت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے موجودہ کرونا وائرس کے حالات حالات پر تبادلہ خیال کیا۔انکا کہنا تھا کہ ہمیں اس وبائی مرض میں عوام کے طرز عمل کی رہنمائی، حوصلہ افزائی کرنا ہوگی۔تاکہ وہ ان حالات کا سامنہ کر سکیں۔ ڈاکٹر سادیہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ ہمیں فرد واحد اور باہمی دونوں طرح سے مل کر درپیش پریشانیوں اور مسائل کا حل تلاش کرنا ہوگا۔ صدر یو ایم ٹی ابراہیم حسن مراد نے ڈائریکٹر انسٹیٹیوٹ آف کلینیکل سائیکولوجی یو ایم ٹی اور انکی ٹیم کو کامیاب ای کانفرنس کے انعقاد پر مبارکباد پیش کی اور بتایا کہ یو ایم ٹی تعلیم کے حصول کے ساتھ ساتھ معاشرتی اقدار کے فروغ میں اپنا کردار ادا کرتی ہے۔انہوں نے بتایا کہ تعلیم کا بنیادی کردار نہ صرف پڑھا لکھا معاشرہ قائم کرنا ہے بلکہ افراد مین بہترین انسانی اقدار کو شامل کرنا بھی ہے۔ابراہیم مراد کا مزید کہنا تھا کہ اس کانفرنس کے انعقاد سے ہم موجودہ وبائی امراض کی وجہ سے درپش مسائل اور چلنجز کا سائیکالوجی کے تحت حل تلاش کر سکتے ہیں۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ یو ایم ٹی کا انسٹیٹیوٹ آف کلینیکل سائیکولوجی یو ایم ٹی کے کامیابی کے مشن میں بھی اہم کردار ادا کر رہاہے۔کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ریکٹر یو ایم ٹی ڈاکٹر محمد اسلم نے معزز مہمانوں و مقررین کا کانفرنس میں شمولیت ختیار کرنے اور کرونا کی وجہ سے ورلڈ آڈر میں ہونے والی تبدیلوں پر روشنی ڈالنے پر شکریہ ادا کیا۔انکا مزید کہنا تھا کرونا وائرس جہاں عالمی نظم و ضبط کو تبدیل کررہا ہے وہاں موجودہ حالات میں درپیش چیلنجز کا سامنا کرنے کے نئے مواقع بھی پید ا کرر ہا ہے۔ ڈاکٹر اسلم نے بتایا کہ یو ایم ٹی سٹاف اور فیکلٹی کی مدد سے نفسیاتی تعلیم و اثرات کی نئی جہتوں پر تحقیق کرکے ملک و قوم کی خدمت میں اپنا قلیدی کردار ادا کر رہی ہے۔مہمان و مقرر ڈاکٹر ربیکا کے فوکس او رڈاکٹر آنیہ نے فاصلہ رکھتے ہوئے آن لائن ماحول میں طلباء کی شمولت کیلیئے نئے حکمت عملی کے بارے میں بات کرنے کے ساتھ ساتھ کرونا کے ماحول میں دماغی صحت اور نفسیاتی تعاون کے بارے میں بھی تبادلہ خیال کیا۔تمام ماہرین نے اس نقطہ پر اتفاق کیا کہ تمام کرونا وائرس ورلڈ آرڈر کو نئی تشکیل دے کر سسٹمیٹک چیلنجز کا حل تلاش کرنے کا موقع بھی فراہم کر رہا ہے۔ تمام مقررین نے اس بات کا بھی اظہار کیا کہ بطور معلم ہمیں اس چیلنج کا سامنا کرتے ہوئے آن لائن دنیا کے بارے میں اپنے علم اور تجر بے اور صلاحیتوں کواپڈیٹ کرنا ہوگا۔ کیونکہ آنلائن دنیا کے نئے ٹولز سیکھنے کے عمل کو بڑھا سکتے ہیں۔300 سے زائد طلباء، اساتذہ،اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی بڑی تعداد نے zoomکے ذریعے یو ایم ٹی کے تحت ہونے والی پہلی بین الاقوامی ای کانفرنس میں شرکت کی۔

مزید :

کامرس -