بلاول زرداری سندھی اجرک کا ماسک پہن کر لوگوں کو بیوقوف بنانا بند کریں ،پیپلز پارٹی کے خلاف تحریک انصاف کھل کر میدان میں آگئی،بڑا اعلان کردیا 

بلاول زرداری سندھی اجرک کا ماسک پہن کر لوگوں کو بیوقوف بنانا بند کریں ،پیپلز ...
بلاول زرداری سندھی اجرک کا ماسک پہن کر لوگوں کو بیوقوف بنانا بند کریں ،پیپلز پارٹی کے خلاف تحریک انصاف کھل کر میدان میں آگئی،بڑا اعلان کردیا 

  

نواب شاہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما اور سندھ اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ  نے کہا ہے کہ بلاول بھٹو سندھ کی اجرک کا ماسک پہن کر لوگوں کو بیوقوف بنانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں،بلاول بھٹو اجرک ماسک پہننے کی بجائے سندھ کے ہسپتال میں ادویات،سکولز میں کتابیں اور پینےکا پانی فراہم کریں،بلاول بھٹو اپنے انتخابی حلقے کےمسائل تو حل نہ کراسکے وہ سندھ کیسے دیکھ سکتے ہیں؟ پیپلز پارٹی کی صوبائی حکومت 4ماہ کی مہمان ہے ، بلاول بھٹو نے وفاقی حکومت کے خلاف تحریک شروع کی تو ایک دن پہلے پیپلز پارٹی کی کرپشن کے خلاف لاڑکانہ سے تحریک شروع کرینگے۔

نواب شاہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کی 12 سالہ کارکردگی زیرو رہی ہے، بھٹو کے نام سے منسوب لاڑکانہ بنیادی مسائل سے محروم ہے،کورونا فنڈز سندھ حکومت ہڑپ کرگئی،تھر سے کشمور تک پینے کا صاف پانی عوام کو میسر نہیں،سندھ کے سرکاری ہسپتالوں میں ادویات نایاب اور تعلیم کے حصول کے لیے بچے کتابوں سے محروم ہیں،سندھ سرکار کی کارکردگی سے گدھا گاڑی اور چنگ چی ایمبولنس متعارف ہوئی۔حلیم عادل شیخ نے کہا کہ سندھ میں 80 ارب کی سبسڈی دی گی اس کے باوجود سندھ میں گندم غائب ہے، سندھ میں آٹے کا بحران اور مہنگے داموں فروخت ہونے کی صوبائی حکومت ذمہ دار ہے،16 ارب کی گندم محکمہ خوراک سندھ نے ذاتی لوگوں کوجعلی چیکوں پر فروخت کردی، سندھ حکومت کا محکمہ خوراک 80 ارب روپے کا بنکوں کا مقروض ہے۔

حلیم عادل شیخ نے کہاکہ بلاول بھٹو سندھی اجرک کا ماسک پہن کر بیوقوف بنانے کی ناکام کوشش کررہا ہے،بلاول بھٹو اجرک ماسک پہننے کے بجائے سندھ کے ہسپتالوں میں ادویات،سکولوں میں کتابیں اور صوبے کے لوگوں کو  پینے کا صاف پانی فراہم کرے،سندھ میں لگائے جانے والے فلٹر پلانٹ کے پیسوں سے بلاول ہاؤس کے ناشتے میں خرچ ہوتے ہیں۔حلیم عادل شیخ نے کہاوزیر اعظم عمران خان نے احساس پروگرام کے تحت سندھ کے 50 لاکھ لوگوں کو 60ارب دیئے ہیں،سندھ میں 65 فیصد ریونیو کراچی دیتا ہے،عمران خان کے بلین ٹری سونامی منصوبہ کی تعریف کی جارہی ہے، سندھ میں بھی ایک شخص پودا لگانے کی مہم شروع کریں گے،مائنس ون نہیں مائنس چار سو بیس ہوگا ،ہر کرپٹ شخص کے خلاف کاروائی ہوگی،پیپلز پارٹی سندھ میں 70 فیصد ختم ہوچکی،18 ویں ترمیم نے ہمارے ہاتھ باندھ دیے ہیں، آئین میں شق 235 موجود ہے گورنر راج لگ سکتا ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -لاڑکانہ -