پنجا ب حکو مت نے سر ما یہ کا ر ی کیلئے ساذ گار ما حو ل پیدا کیا نتجہ خیز پا لیسیاں بنا نا ھو نگی

پنجا ب حکو مت نے سر ما یہ کا ر ی کیلئے ساذ گار ما حو ل پیدا کیا نتجہ خیز پا ...

        لاہور(جنرل رپورٹر+ سپیشل رپورٹر)وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت صوبے میں سرماےہ کاری اور صنعتی عمل کے فروغ کے لئے ٹھوس اقدامات کر رہی ہے۔ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کو فروغ دے کر ملکی معیشت کو مضبوط بنایا جاسکتا ہے۔ پنجاب حکومت اور مختلف کمپنیوں کے نمائندے مل بیٹھ کر ٹھوس پالیسیوں کے لئے سفارشات مرتب کریں۔ مختلف نجی اداروں کے چیف ایگزیکٹو افسران کی سود مند تجاویز کی روشنی میں سرماےہ کاری ،معاشی اور صنعتی سرگرمیوں کو فروغ دےنے کے لئے بلاتاخیر اقدامات کئے جائیں گے ۔وہ ایوان وزیراعلیٰ میں مختلف کمپنیوں کے چیف ایگزیکٹو افسران سے ملاقات کر رہے تھے۔ ملاقات کے دوران سرماےہ کاری کے فروغ ، معاشی استحکام ،توانائی کے بحران کے خاتمے اور صنعتکاری کے عمل کو تیز کرنے کے حوالے سے تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے چیف ایگزیکٹو افسران سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے صوبے میں سرماےہ کاری کے لئے ساز گار ماحول پیدا کیا ہے،سرماےہ کاروں کو ایک ہی چھت تلے تمام سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔ سرماےہ کارتوانائی اور دیگر شعبوں میں بھر پور سرماےہ کاری کریں ، تمام رکاوٹیں دور کریںگے۔ پنجاب اورپاکستان کو معاشی سرگرمیوں کا مرکز بنانے کےلئے سرماےہ کار دوست اور نتیجہ خیز پالیسیاں بنانا ہوں گی۔ غربت اور بے روزگاری کے خاتمے کے لئے صنعتکار ی کے عمل کو ہر صورت تیز کرنا ہوگا۔ ملک کی برآمدات بڑھا کر قومی معیشت کو مضبوط کیا جا سکتا ہے ۔ اس موقع پر وزیراعلی نے مختلف کمپنیوں کے چیف ایگزیکٹو افسران اور سرکاری محکموں کے نمائندوں پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی جو 2ہفتوں میں توانائی کے بحران کے خاتمے ، معاشی وتجارتی سرگرمیوں کے فروغ اور صنعتکاری کے عمل کو تیز کرنے کے لئے سفارشات تیار کرے گی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں ایسی جامع اورٹھوس معاشی پالیسی تشکیل دی جائے گی جس سے صوبے میں سرماےہ کاری کو فروغ ملے گا۔ انہوں نے وفد کو یقین دلایا کہ مختلف صنعتوں اور شعبوں کے چیف ایگزیکٹو افسران کی جانب سے اٹھائے گئے مسائل کے حل کے لئے وفاقی حکومت سے بات کی جائے گی اور مسائل کے حل کے لئے میں ذاتی طور پر کردار ادا کروں گا ۔ برآمدات کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اشیاءکی نقل و حمل کو تیز کرنے کے لئے موثر ٹرانسپورٹیشن سسٹم بنانے کی ضرورت ہے۔ خلیجی ریاستوں میں تازہ پھل ، پھول اور دیگر اشیاءبروقت نہ پہنچا سکے تو ےہ ہماری ناکامی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ خلیجی ریاستوں میں تازہ پھلوں اور پھولوں کی تجارت کا بہت پوٹیشنل موجود ہے، پاکستانی سرمایہ کاروں کو اس سیکٹر کی جانب بھرپور توجہ دینے کی ضرورت ہے اور مجھے یقین ہے کہ پاکستانی سرمایہ کار خلیجی مارکیٹ میں بڑا شیئر حاصل کرسکتے ہیں۔ دریں اثناءوزیر اعلیٰ پنجاب اور ایشیائی ترقیاتی بنک کے وفد کے درمیان توانائی کے شعبے میں تعاون بڑھانے کے حوالے سے انتہائی نتیجہ خیز اور مفید بات چیت ہوئی۔ وزیر اعلیٰ نے ایشیائی ترقیاتی بنک کے وفد پر زور دیتے ہوئے کہا کہ عوام بجلی بحران سے تنگ ہیں۔ ہم نے منصوبے سپر سونک سپیڈ سے مکمل کرنے ہیں لہٰذا آپ منصوبوں کو جتنی جلدی ہوسکے مکمل کریں۔ وزیرا علیٰ کے زور دینے پر ایشیائی ترقیاتی بنک کے وفد نے پہلے منصوبے کو ایک سال کے اندر مکمل کرنے کی یقین دہانی کرائی جبکہ 2000میگا واٹ کے دیگر منصوبے دو سال میں مکمل کرنے پر اتفاق کیا۔

شہبازشریف

مزید : صفحہ اول


loading...