پاکستان ، بھارت اور افغانستان میں قحط اور خشک سالی کا خطرہ ہے, عالمی بینک

پاکستان ، بھارت اور افغانستان میں قحط اور خشک سالی کا خطرہ ہے, عالمی بینک

             اسلام آباد(اے پی اے ) عالمی بینک نے خبردار کیا ہے کہ آئندہ سالوں میں گرمی کی شدت بڑھنے سے پاکستان ، بھارت اور افغانستان میں قحط اور خشک سالی کا خطرہ ہے ۔ عالمی بینک کی حالیہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ موسمی تغیرات کے باعث آئندہ دو سے تین دہائیوں میں عالمی سطح پر درجہ حرارت میں دو ڈگری سیلسیئس اضافہ ہوجائے گا۔ رپورٹ میں بالخصوص افریقہ ، جنوبی اور جنوب مشرقی ایشیا کے ترقی پزیر ممالک پر بڑھتے ہوئے درجہ حرارت کے اثرات کا جائزہ لیا گیا ہے۔ جہاں دنیا کے سب سے زیادہ غریب افراد آباد ہیں۔ رپورٹ کے مطابق آئندہ سالوں میں جنوی ایشیا میں گرمی کی شدت میں کئی گنا اضافہ ہوجائے گا ،۔ جس کی وجہ سے مغربی بھارت، پاکستان اور افغانستان خشک سالی کی لپیٹ میں آجائیں گے،، اور پینے کی پانی کی قلت کا سامنا ہوگا۔ جبکہ موسمی شدت کی وجہ سے گندم، چاول اور مکئی کی فصلوں کو سب سے زیادہ نقصان کا اندیشہ ہے۔

 جس کی وجہ سے دو ہزار پچاس تک افریقہ کی پچیس سے نوے فیصد آبادی غذائی قلت کا شکار ہوجائے گی۔ عالمی بینک کا کہنا ہے کہ آئندہ سالوں میں موسمی شدید تغیرات اور اس کے اثرات سے بچنے کے لئے گرین ہاو¿س گیس کے اخراج پر قابو پانا اشد ضروری ہوگیا ہے۔

مزید : کامرس


loading...