عامرمحتاط رہیں برطانوی میڈیاان پرنظررکھے گا،عمرگل

عامرمحتاط رہیں برطانوی میڈیاان پرنظررکھے گا،عمرگل

پشاور(آئی این پی)پاکستان کرکٹ ٹیم کے فاسٹ باؤلر عمر گل نے دورہ انگلینڈ کیلئے منتخب کی جانے والی ٹیم کو بہترین قرار دیتے ہوئے عامر کو خبردار کیا ہے کہ انگلش میڈیا ان کی ایک ایک حرکت پر نظر رکھے گا۔کرکٹ ویب سائٹ پاک پیشن کو دیے گئے انٹرویو میں عمر گل کا کہنا تھا کہ ٹیسٹ سیریز کے لیے منتخب کی گئی ٹیم اچھی نظر آرہی ہے تاہم کوئی بھی سلیکٹرز کے انتخاب پر مطمئن نہیں ہوتا لیکن اس معاملے پر میں کھلاڑیوں سے خوش ہوں ۔ان کا کہنا تھا کہ یہ ٹیم پاکستان کو متحدہ عرب امارات میں کامیابی دلانے والی ٹیم جیسی ہے ۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ محمد عامر کو دورے میں بہت زیادہ دبا ؤکا سامنا ہوگا اور یہ سب کچھ 2010 کے واقعے کے باعث متوقع ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ برطانوی میڈیا ان کی ایک ایک جنبش کو دیکھے گا اور میں ان کو بتانا چاہوں گا کہ وہ اپنی بالنگ کے ذریعے جواب دیں اور اپنی نقل و حرکت کو ہوٹل سے گراؤنڈ تک محدود رکھتے ہوئے کھیل پر توجہ دیں، یہی چیز تنقید اور پیچھے باتیں کرنے والوں کے لیے بہترین جواب ہوگا۔دورہ انگلینڈ کو پاکستان ٹیم کے لیے بڑا چیلنج قرار دیتے ہوئے عمر کا کہنا تھا کہ پاکستان ٹیم ٹیسٹ میں گزشتہ چند سالوں سے متحدہ عرب امارات اور برصغیر کی وکٹوں پر اچھی کرکٹ کھیل رہی ہے لیکن انگلینڈ کا دورہ ان کے لیے بڑا امتحان ہوگا ۔ان کا کہنا تھا کہ میں امید کرتا ہوں کہ وہ خود کو جلد از جلد انگلینڈ کی کنڈیشنز کے مطابق ڈھال سکیں اور اگر انہوں نے ایسا کیا تو دورے میں پاکستان کو جیت سے کوئی نہیں روک سکتا ۔ان کا کہنا تھا کہ میں مصباح الحق کے ٹیسٹ ٹیم کی کپتانی کو جاری رکھنے کے فیصلے سے بہت خوش ہوں اور وہ ٹیم کی بہتر رہنمائی کررہے ہیں، ٹیم میں تجربہ کار بلے باز یونس خان اور مصباح الحق سے دیگر کھلاڑی سیکھتے ہوئے اعتماد حاصل کرسکتے ہیں۔دورہ انگلینڈ میں ٹیم کی کارکردگی پر بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ اس دورے کے لیے ہمارے پاس بہترین بالنگ اٹیک موجود ہے، محمد عامر فاسٹ بالنگ میں بہترین ہیں اور انگلینڈ میں وہ بنیادی کردار ادا کریں گے جبکہ سہیل خان بھی سیمنگ کنڈیشنز پر بالنگ کرنے کا فن جانتے ہیں'۔لیگ اسپنر یاسر شاہ کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ 'یاسر شاہ پاکستان ٹیم کے پاس ایسے بہترین بالر ہیں جو کسی بھی جگہ وکٹیں حاصل کرسکتے ہیں، وہ بتدریج ترقی کررہے ہیں، وقت بتائے گا کہ وہ انگلینڈ میں کیسی بالنگ کرتے ہیں لیکن موسم کے اعتبارسے ہم ان سے زیادہ وکٹوں کی توقع کر سکتے ہیں۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی