کرپشن کیخلاف بلاول بھٹو سمیت کسی کے ساتھ بھی کھڑا ہو سکتا ہوں ، عمران خان

کرپشن کیخلاف بلاول بھٹو سمیت کسی کے ساتھ بھی کھڑا ہو سکتا ہوں ، عمران خان

 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ میں یہ بات دعوے سے کہہ سکتا ہوں کہ ملک میں مارشل لا لگے گا نہ ہی یہ حکومت بچے گی۔کرپشن کیخلاف بلاول اور میں ایک کنٹینر پر اکٹھے ہو سکتے ہیں۔کرپشن کیخلاف کسی کے ساتھ بھی کھڑا ہو سکتا ہوں۔جیو نیوز کے پروگرام’’ کیپٹل ٹاک‘‘ میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جمہوریت کو سب سے زیادہ خطرہ نواز شریف سے ہے۔ کسی کو کوئی شک ہے تو نواز شریف کے ساتھ ساتھ میرا احتساب بھی کر لیا جائے۔لندن فلیٹس خریدنے کیلئے نواز فیملی نے باہر پیسے بھیجے۔ ان کی آمدنی جائز نہیں تھی۔فلیٹ خریداری کی دستاویزات اسمبلی میں جمع کروا دی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ نوا ز شریف کے بچوں کے متضاد بیانات سامنے آرہے ہیں۔ نواز شریف کی سالانہ آمدنی سے لندن میں ایک فلیٹ بھی کرائے پر نہیں مل سکتا۔ نواز شریف کا نام اس لئے آئے گا کیونکہ انہوں نے ہی اپنے بچوں کو پیسے دیئے۔کوئی بتائے کہ بچوں کے پاس کہاں سے پیسہ آیا۔ ٹی او آرز پر اتفاق رائے کی کوشش کریں گے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں نیب 15سال سے کام کر رہی ہے لیکن کرپشن بڑھتی جا رہی ہے۔روزانہ ایک ارب روپے کی نیب میں کرپشن ہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ کون سی جمہوریت ہے کہ وزیراعظم نواز شریف کی غیر موجودگی میں مریم نواز وزیراعظم ہاوس اور شہباز شریف کی غیر موجودگی میں حمزہ شہباز وزیراعلیٰ ہاوس سنبھالتا ہے۔ساری اپوزیشن اسمبلی میں اکٹھی ہے۔عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ 77کے الیکشن میں صرف10حلقوں میں دھاندلی کی شکایات تھیں اور ساری قوم سڑکوں پر نکل آئی تھی۔2013کے الیکشن میں تو اس سے کہیں بڑے پیمانے پر دھاندلی ہوئی۔22جماعتوں نے کہا کہ دھاندلی ہوئی

مزید : صفحہ اول