اشیائے خواراک کی درآمد 4ارب 87کروڑ 24ہزار ڈالر تک پہنچ گئی

اشیائے خواراک کی درآمد 4ارب 87کروڑ 24ہزار ڈالر تک پہنچ گئی

 لاہور(کامرس رپورٹر) اشیائے خوراک کی درآمد 7.10 فیصد کے اضافے سے 4ارب 87کروڑ 31لاکھ 24 ہزار ڈالر تک پہنچ گئی، جولائی 2015 سے مئی 2016تک شیرخواربچوں کے دودھ کی درآمد5.46 فیصد کمی سے 24 کروڑ 48لاکھ 76 ہزار ڈالر تک محدود رہی۔ پاکستان بیورو شماریات (پی بی ایس) کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 11 ماہ کے دوران ملک میں گندم درآمد نہیں کی گئی تاہم خشک میوہ جات اور نٹس کی درآمدات 43.20فیصد کا نمایاں اضافہ ہوا۔اس دوران 15کروڑ 11لاکھ 28 ہزار ڈالر کے 1لاکھ 79ہزار 629 میٹرک ٹن خشک میوے درآمد کیے گئے جبکہ گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں 10کروڑ 55لاکھ 33 ہزار ڈالر کی 1لاکھ 43ہزار 631 میٹرک ٹن خشک میوے بیرون ملک سے منگوائے گئے تھے، رواں مالی سال کے آغاز سے مئی تک چائے کی درآمدات بھی 50.96 فیصد تک بڑھ گئیں، اس دوران 47کروڑ 58لاکھ 32 ہزار ڈالر کی 1لاکھ 64ہزار 290 میٹرک ٹن چائے باہر سے خریدی گئی جبکہ گزشتہ مالی سال کے ابتدائی 11ماہ میں 31کروڑ 52لاکھ 5 ہزار ڈالر کی 1لاکھ41ہزار 257 میٹرک ٹن چائے در آمد کی گئی تھی۔مصالحہ جات کی درآمد بھی رواں مالی سال38.26 فیصد کے اضافے سے 13کروڑ 50لاکھ 55 ہزار ڈالر تک پہنچ گئی جوگزشتہ مالی سال9کروڑ 76لاکھ 79ہزار ڈالر تک محدود تھی، جولائی سے مئی تک سویابین آئل کی درآمد279.33 فیصد کے اضافے سے 17کروڑ 40لاکھ 56ہزار ڈالر رہی جو گزشتہ مالی سال صرف 4کروڑ 58لاکھ 85 ہزار ڈالر تک محدود تھی، رواں مالی سال پام ا آئل کی درآمد میں کمی ہوئی۔گزشتہ11ماہ میں پام آئل کی درآمد 3.04 فیصد کمی کے باعث 1ارب 59کروڑ 69لاکھ 67 ہزار ڈالر سے گھٹ کر 1ارب 5کروڑ 48ہزار 462 ڈالر تک محدود رہی، پاکستان نے چینی کی فاضل پیداوار کے باوجود رواں سال بیرون ملک سے چینی درآمد کی، گزشتہ 11ماہ میں چینی کی درآمد0.24 فیصد کے اضافے سے 59لاکھ 39 ہزار ڈالر تک پہنچ گئی، دالوں کی درآمد 44.19 فیصد بڑھی، جولائی سے مئی تک 52کروڑ 81لاکھ 68 ہزار ڈالر کی 8لاکھ 23ہزار 801میٹرک ٹن دالیں درآمد کی گئی، گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں 36کرور 62لاکھ 93 ہزار ڈالر کی 5لاکھ 86ہزار 656 میٹرک ٹن غیرملکی دالیں خریدی گئی تھی۔

، دیگر اشیائے خوراک کی درآمدات 2.39 فیصد کے اضافے سے1ارب 60کروڑ 96لاکھ 8 ہزار ڈالر رہیں۔۔#/s#

مزید : کامرس