مشرق وسطیٰ میں جاری جنگ کا وہ شرمناک نتیجہ سامنے آگیا جس کے بارے میں اس سے پہلے کبھی کسی نے سوچا بھی نہ تھا

مشرق وسطیٰ میں جاری جنگ کا وہ شرمناک نتیجہ سامنے آگیا جس کے بارے میں اس سے ...
مشرق وسطیٰ میں جاری جنگ کا وہ شرمناک نتیجہ سامنے آگیا جس کے بارے میں اس سے پہلے کبھی کسی نے سوچا بھی نہ تھا

  

دمشق(مانیٹرنگ ڈیسک) شام میں جاری طویل جنگ سے جہاں دیگر کئی گھمبیر مسائل جنم لے چکے ہیں وہیں غیرشادی شدہ خواتین کی تعداد میں بھی ہوشربا اضافہ ہو چکا ہے جس کی وجہ سے شامی خواتین ایک مناسب شوہر کی تلاش میں کسی بھی حد تک جانے کو تیار نظر آتی ہیں اور اس صورتحال کے نتیجے میں خواتین میں ایک اور برائی ’ہم جنس پرستی‘ بھی اس حد تک رواج پکڑ چکی ہے کہ گویا اسے جائز قرار دے دیا گیا ہو۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق شام میں بہت سے مرد لڑائی میں کام آ گئے، لاکھوں ہجرت کرکے دیگر ممالک میں جا بسے، اور بہت سے جیلوں میں قید ہیں۔ باقی جو بچے ہیں ان میں سے اکثر کے مالی حالات جنگ کے باعث اس قدر دگرگوں ہو چکے ہیں کہ وہ شادی کرنے کی پوزیشن میں نہیں رہے۔ ایسے میں دمشق سمیت شام کے دیگر شہروں میں غیرشادی خواتین کی تعداد بہت زیادہ ہو چکی ہے۔ ان شہروں میں بالخصوص نوجوان مردوں کا فقدان ہو گیا ہے جس کے باعث قدرے مالدار بوڑھے مرد نوجوان لڑکیوں کو ورغلا کر ان سے شادیاں کر رہے ہیں۔

رپورٹ کے مابق 32سالہ شکران اور 35سالہ غوفران بھی ایسی خواتین میں سے ہیں جن کی شادی کی عمر نکلی جا رہی ہے مگر انہیں اب تک کوئی دولہا میسر نہیں آ سکا۔ ڈیلی میل سے گفتگو کرتے ہوئے شکران کا کہنا تھا کہ ”آپ حجاموں سے جا کر پوچھیں۔ ان کے گاہکوں میں تین چوتھائی کمی واقع ہو چکی ہے۔ اس سے آپ شام میں مردوں کی کمی کا اندازہ لگا سکتے ہیں۔میرے کئی مرد دوست موت کے منہ میں جا چکے ہیں، کچھ ہجرت کر گئے ہیں اور کچھ قید میں ہے۔ یہاں ایسا کوئی بھی نہیں رہا جس سے میں شادی کر سکوں۔“رپورٹ کے مطابق شام میں مرد آئے روز غائب ہو رہے ہیں اور کنواری خواتین اور بیواﺅں کی شرح تیزی سے بلند ہو رہی ہے۔ ایک حالیہ سروے کے نتائج میں چشم کشا انکشاف ہوا ہے کہ اس وقت شامی خواتین میں 70فیصد غیرشادی شدہ ہیں۔ شکران کا کہنا تھا کہ ”ہمارے ملک میں .... وہ آپ کیا کہتے ہیں....ہاں مسٹر رائٹ.... اس ملک میں خواتین کا اپنے لیے مسٹر رائٹ تلاش کرنا بہت مشکل ہو چکا ہے، اتنا مشکل ماضی میں کبھی نہیں ہوا تھا۔ “

مزید : عرب دنیا