ویمن چیمبر کاڈالر کی قیمت میں تاریخ ساز اضافہ پر تشویش کا اظہار

ویمن چیمبر کاڈالر کی قیمت میں تاریخ ساز اضافہ پر تشویش کا اظہار

لاہور(کامرس رپورٹر)ویمن چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی رہنماء و سابق صدر شازیہ سلیمان نے ڈالر کی قیمت میں تاریخ ساز اضافہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی روپے کی بے قدری سے جہاں زرمبادلہ کے زخائر میں کمی واقع ہو گی وہیں غیر ملکی قرضوں کے حجم میں اربوں ڈالر کا اضافہ ہو جائے گا ۔جس سے درآمدات میں کمی اور ملکی معیشت پر منفی اثرات مرتب ہونگے ۔شازیہ سلیمان نے کہا کہ ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ سے بیرون ملک سے منگوایا گیا صنعتی شعبہ میں استعمال ہونے والا خام مال مہنگاہونے سے صنعتی شعبہ متاثر ہوگا اور صنعتی شعبہ پر اضافی مالی بوجھ بڑھے گا ،انہوں نے کہا کہ روپے کی قدر میں کمی اور ڈالر مہنگا ہونے سے حکومتی قرضوں کے حجم میں مزید اضافہ ہوگا۔

جس سے ملکی معیشت متاثر ہوگی اور ان قرضوں کی ادائیگی کیلئے ملک کے اندر ٹیکسوں کے بوجھ میں اضافہ سے ہوشربا مہنگائی جنم لے گی۔انہوں نے کہا کہ نگران حکو مت ڈالر کی بے لگام پرواز کو لگام دے کیونکہ ڈالر کی قیمت بڑھنے سے خام مال مہنگا اور صنعتکار پریشانی کا شکار ہیں۔انہوں نے کہا کہ بیرون ممالک سے خام مال کی قیمت میں اضافہ پیداواری لاگت میں اضافہ اور مہنگی اشیاء کے باعث درآمدات میں کمی واقع ہوگی۔انہوں نے کہا کہ روپیہ کی قدر میں کمی اور تونائی بحران کے باعث صنعتی پیداوار بری طرح متاثر ہورہی ہے اور پاکستان عالمی مارکیٹ سے تیزی سے باہر ہورہا ہے اور ڈالر کی قیمت بڑھنے سے ملک پر بیرونی قرضوں میں بھی اضافہ ہورہا ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی