مارشل لا یا شخصی آمریت ملکی مسائل کا حل نہیں ہیں،لیاقت بلوچ

مارشل لا یا شخصی آمریت ملکی مسائل کا حل نہیں ہیں،لیاقت بلوچ

لاہور ( پ ر)متحدہ مجلس عمل وجماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ سوچے سمجھے منصوبے کے تحت یہ ابہام پیداکئے جاتے ہیں کہ انتخابات ہوں گے یا نہیں ،پس پردہ قوتیں ہمیشہ بے یقینی کوقائم رکھتی ہیں تاکہ حالات کواپنے مفادات کے مطابق استعمال کر سکیں، مارشل لاء یا شخصی آمریت مسائل کا حل نہیں ایسے حالات میں ایسا کوئی قدم قومی وحدت کیلئے زہرقاتل ہوگا ۔ان خیالات کااظہارانھوں نے متحدہ مجلس عمل این اے 58کے زیراہتمام منعقدہ عید ملن پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پرایم ایم اے کے ضلعی صدرشمس الرحمن سواتی ، امیدوارحلقہ پی پی 8راجہ محمد جواد،امیدوارحلقہ پی پی9چوہدری عابد حسین ایڈووکیٹ، امیدوارقومی اسمبلی مفتی محمودحسین شائق،ضلعی نائب صدرسیدنصیرحسین موسوی سمیت دیگرعہدیداران نے بھی خطاب کیا ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ پاکستان پرہمیشہ دوجماعتی نظام مسلط کرنے کی کوشش کی گئی جس سے خرابی پیداہوئی ،بھٹوایک پاپولرلیڈربن کرابھرے لیکن ان کے گرد بھی سرمایہ داراورجاگیردارآئے ،ان کے خلاف اینٹی بھٹوکے نعرے پر نوازشریف آئے لیکن انہوں نے بھی قوم کی توقعات کا خون کیا ،عمران خان نے تبدیلی کا نعرہ لگایا لیکن ملک کوتباہی سے دوچارکرنے والے ان کے گرد جمع ہیں اورنظریاتی سیاست کا نعر ہ لگانے والوں کے خلاف ان کے اپنے ہی کارکنان سراپااحتجاج ہیں ۔انہوں نے کہاکہ سیکولرطبقہ نہیں چاہتا کہ پاکستانی سیاست میں شائستگی اوررواداری آئے اور نئی نسل اسلامی تعلیمات سے روشناس ہواسی لئے منبرومحراب کودہشتگردی سے جوڑا گیا لیکن وقت نے ثابت کیا کہ پرویزمشرف نے یکطرفہ طوپرسرنڈرکیا اور دہشتگردی کے پیچھے امریکی وردی اور مودی ہے ۔

لیاقت بلوچ

مزید : میٹروپولیٹن 1