احسن اقبال کی توہین عدالت درخواست پر کارروائی الیکشن تک ملتوی کرنے کی استدعا مسترد

احسن اقبال کی توہین عدالت درخواست پر کارروائی الیکشن تک ملتوی کرنے کی استدعا ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ کے فل بنچ نے سابق وفاقی وزیر احسن اقبال کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کے لیے درخواست پر سماعت عام انتحابات تک ملتوی کرنے کی استدعا مسترد کر دی اور حکم دیا کہ 29 جون کو تحریری جواب داخل کروایا جائے ۔ احسن اقبال کے وکیل نے استدعا کی کہ ان کے موکل نے کاغذات نامزدگی جمع کروا دیئے ہیں ،ان کے مخالف الیکشن مہم چلا رہے ہیں اور وہ پیشیاں بھگت رہے ہیں ،اس معاملے کو درگزر کیا جائے۔ وکیل اعظم نذیر تارڑ نے استدعا کی کہ احسان کریں اور سماعت عام انتخابات تک ملتوی کردیں ،بنچ نے ہدایت کی کہ اگر احسن اقبال کو حاضری سے استثنیٰ چاہیے تو اس پر غور کیا جا سکتا ہے۔دریں اثناء سابق وفاقی وزیر نے لاہورہائی کورٹ کے احاطہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ زعیم قادری کی پریس کانفرنس پر دلی دکھ ہوا،پارٹی کے فیصلوں پر شکایت ہے تو پارٹی میں بات کریں،زعیم قادری پہلے پارٹی میں شکایت کرتے تو اچھا ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ بیگم کلثوم نواز کی خراب صحت میں سب قائدین مصروف ہیں، اس حوالے سے کسی سے کوئی بات نہیں ہوئی۔ عدلیہ کا احترام کرتا ہوں، اداروں کا احترام کرتا ہوں، بداعتمادی ختم ہونی چاہیے،غیر ملکی اخبار اور رسالے کہہ رہے ہیں کہ مسلم لیگ نواز کو نشانہ بنایا جارہا ہے، ایمان پر فیصلہ اللہ کرے گا، لوگ نہیں بتا سکتے میرا ایمان کتنا پختہ ہے، تعصب کی بنیاد پر سیاست نہیں ہونی چاہیے، انہوں نے کہا کہ دعا ہے اللہ بیگم کلثوم کو صحت دے،اپنے مدمقابل امیدوار کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال میں احسن اقبال نے کہا کہ ابرار الحق ایک اچھے گلوکار ہیں۔

مزید : صفحہ آخر