کراچی کو برباد کرنے والے پھر عوام سے ووٹ مانگ رہے ہیں : سراج الحق

کراچی کو برباد کرنے والے پھر عوام سے ووٹ مانگ رہے ہیں : سراج الحق

لاہور (آن لائن) جماعت اسلامی پاکستان کے امیر و متحدہ مجلس عمل پاکستان کے نائب صدر سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ کراچی کو لوٹنے اور برباد کرنے والے آج پھر عوام سے ووٹ مانگ رہے ہیں ، حکمرانوں کے اثاثے سامنے آنے سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ انہوں نے اثاثے بنانے کے سوا کوئی کام نہیں کیا،انتخابات بروقت ہونے چاہئیں اور نگراں حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ غیر جانبدار ہوکر الیکشن کے بروقت انعقاد کو یقینی بنائے۔ متحدہ مجلس عمل میدان میں موجود ہے، اقتدار میں آکر قرآن کی بالادستی اور سودی معیشت کا خاتمہ کریں گے، دفاع کے بعد سب سے زیادہ تعلیم اور صحت پر خرچ کیا جائے گا، اردو کو قومی زبان کے طور پر رائج اور یکساں نظام تعلیم نافذ کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کے روز نائب امیر جماعت اسلامی کراچی و سابق رکن قومی اسمبلی مظفر احمد ہاشمی کے اہل خانہ سے ملاقات و تعزیت کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ الیکشن 2018کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ الیکشن ہوں گے یا نہیں ، ہماری تجویز یہی ہے کہ حالات جو بھی ہو ں الیکشن وقت پر ہی ہونے چاہئیں اور نگراں حکومت کی ذمہ داری ہے کہ غیر جانبدارہوکر الیکشن بروقت کروائے ۔ نگراں حکومت کا ایجنڈا صرف اور صرف الیکشن ہی ہونا چاہیے ورنہ ان کے بارے میں خیال کیا جائے گا یہ کسی اور ایجنڈے کے لیے کام کررہے ہیں ۔امید ہے کہ نگراں حکومت سو فیصد غیر جانبدا رہوکر الیکشن کروائے گی ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی عالم اسلام اور پاکستان کا ایک اہم شہر ہے جو ایک طویل عرصے سے مشکلات کا شکار ہے ، پانی اور لوڈ شیڈنگ کا مسئلہ آج تک حل نہیں ہوسکا ۔ اسی طر ح شہر میں آج بھی کچرے کے ڈھیر موجود ہیں ، ٹرانسپورٹ کے شدید مسائل ہیں، شہر میں پبلک ٹرانسپورٹ نہ ہونے کے برابر ہے ۔بے روزگاری عام ہے ۔ آج وہی لوگ 2018کے الیکشن میں پھر سے عوام سے ووٹ مانگ رہے ہیں اور پھر سے کراچی کو لوٹنے کے لیے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کراچی میں عوام کے مسائل کے حل، قیا م امن ، ترقی اور خوشحالی کے لیے مجلس عمل ہی متبادل قیادت ہے ، عوام الیکشن میں مجلس عمل کو کامیاب کرائیں ۔

مزید : صفحہ آخر