اساتدہ معاشرے کا بنیادی جز اور امن کے فروغ کا بہترین ذریعہ ہیں،فادر تقاش

اساتدہ معاشرے کا بنیادی جز اور امن کے فروغ کا بہترین ذریعہ ہیں،فادر تقاش

لاہور ( ایجوکیشن رپورٹر) قومی کمیشن برائے بین المذاہب مکالمہ و بین الکلیسائی اتحاد (کاتھولک بشپس کانفرنس پاکستان کے فروغ امن کی تعلیم کے حوالے سے۱ ساتدہ کرام کے لئے دو روزہ کانفرنس کا انعقاد کیا۔ جس میں لاہور کے نو مختلف سکولز کے اساتدہ نے شرکت کی۔ کانفرنس کے آغاز میں کمیشن کے ڈایوسیزن ڈایریکٹر فادر نقاش اعظم نے کانفرنس کا تعارف اور اغراض و مقاصد پیش کرتے ہوئے کہا کہ اساتدہ معاشرے کا بنیادی جز ہیں اور امن کے فروغ کا ایک بہترین ذریعہ ہیں۔ انہوں نے تمام اساتدہ کو دعوت دی کہ وہ بچوں کوا من کے سفیر بنانے میں اپنا کردار ادا کریں۔

اس کانفرنس کے دوران ہارون گل اور نورین اختر نے مختلف سرگرمیوں کے ذریعے اساتدہ کرام کو فروغ امن کی تربیت دی۔ کانفرنس نے دوسرے روز تمام شریک اساتدہ کے لئے تقسیمِ اسناد کی تقریب منعقد کی گئی جس کے مہمانِ خصوصی آرچ بشپ سبیسٹین فرانسس شاء چیئرمین قومی کمیشن برائے بین المذاہب مکالمہ و بین الکلیسائی اتحاد (کاتھولک بشپس کانفرنس پاکستان) مولانا محمد عاصم مخدوم چیئرمین کل مسالک علماء بورڈ اور ، فادر فرانسس ندیم سیکرٹری قوی کمیشن بین المذاہب مکالمہ نے تمام اساتدہ میں اسناد تقسیم کیں ،اس موقع پر مولانا محمد عاصم مخدوم نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہو ئے اس کانفرنس کے انعقاد کو سراہتے ہوئے کہا کہ یہ ایک منفرد قدم ہے۔ اور ہم کوشش کریں گئے کہ مختلف مدارس اور پرائیویٹ سکولز میں ایسی کانفرنسز منعقد کی جائیں۔ فادر فرانسس ندیم نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہاکہ اساتدہ معاشرے میں قیام امن میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔ سکول میں ایسی تربیت دیں کہ بچے کل کے امن کے سفیر بنیں گے۔ آرچ بشپ سبیسٹین فرانسس شاء نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے امن کے فروغ میں اساتدہ کے کردار پر خصوصی مفصل گفتگو کی۔ اور اساتدہ کو امن کے سفیر بننے اور بین المذاہب مکالمہ کے فروغ کے لئے اپنی ذمہ داری کو خوش اسلوبی سے ادا کرنے کی ترغیب دی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایسی کانفرنس پورے پاکستان میں منعقد کی جائیں گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4