کاغذات مسترد ہونیکی اپیلوں میں 1 0درخواستیں خارج‘ 4پر سماعت آج ہوگی

کاغذات مسترد ہونیکی اپیلوں میں 1 0درخواستیں خارج‘ 4پر سماعت آج ہوگی

ملتان (وقائع نگار ) الیکشن ٹربیونل ملتان نے ریٹرننگ افسران کی جانب سے کاغذات مسترد ہونے کی اپیلوں میں 10 درخواستیں خارج اور 4 درخواستوں پر سماعت آج تک کے لیے (بقیہ نمبر13صفحہ12پر )

ملتوی کردی ہے ۔ فاضل عدالت میں قبل ازیں صوبائی اسمبلی کے حلقہ 232 میں کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے خلاف امیدوار محمد علی لنگڑیال نے اپیل دائر کی تھی کہ اس پر دوہری شہر یت رکھنے کا الزام ہے جو کہ ثابت نہ ہوا ہے ، صوبائی اسمبلی کے حلقہ 209 میں کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے خلاف امیدوار محمد علی ڈاھا نے اپیل دائر کی تھی کہ اس کی عمر 25 سال سے کم ہونے کی بنیاد پر اس کے کاغذات نامزدگی مسترد کردیے گئے فاضل جج نے یونین کونسل کے پیدائش رجسٹر کا ملاحظہ بھی کیا ہے ، صوبائی اسمبلی کے حلقہ 228 کے امیدوار عمیر مصطفیٰ نے درخواست دائر کی تھی کہ اس کے کاغذات نامزدگی دیگر حلقہ کے رہائشی ہونے کی وجہ سے مسترد کردیے گئے ، صوبائی اسمبلی کے حلقہ214کے امیدوار ظہیرالدین علیزء کے خلاف اثاثہ جات چھپانے کے الزام و اعتراضات کی درخواست احتشام الدین فاروقی نے دائر کی تھی ، قومی اسمبلی کے حلقہ 157 کے امیدوار عبدالغفار ڈوگر کے خلاف تعلیمی اعتراضات پر چوہدری ارشد کی جانب سے درخواست دائر کی گئی تھی ،رانا قاسم نون کے خلاف جعلی ڈگری اور ڈیفالٹر کے الزامات کے اعتراف کی درخواست قبل ازیں بغیر وکیل کے پیش ہونے پر سماعت سے معذرت کرتے ہوئے دیگر بینچ کو بھجوانے کے لیے دفتر ہائیکورٹ بھجوا دی ہے ،صوبائی حلقہ 296 راجن پور سے کاغذات مسترد ہونے کے خلاف اللہ ڈتہ نے اپیل دائر کی تھی کہ اس کے کاغذات نامزدگی مسترد کردیے گئے ہیں ، قومی اسمبلی کے حلقہ 190 ڈیرہ غازی خان کے امیدوار سردار محمد عرفان اللہ کھوسہ نے اپیل دائر کی تھی کہ ان کے کاغذات اس بنیاد پر مسترد کردیے گئے کہ وہ اسی حلقہ کا رہائشی نہیں ہے ، صوبائی اسمبلی کے حلقہ 213 اور قومی اسمبلی کے حلقہ 163 کوٹ ادو کے امیدوار طارق احمد گرمانی نے اپیل دائر کی تھی کے اس کے کاغذات اس لیے مسترد کردیے گئے کہ اسکی اولاد نادہندہ تھی ، صوبائی اسمبلی کے حلقہ 292 لیہ کے امیدوار محمد شہادت نے اپیل دائر کی تھی کے اس کے کاغذات اسلئے مسترد کردیے گئے تھے کہ وہ چیئرمین مارکیٹ کمیٹی بھی تھا اور پبلک عہدے کے لیے اہل نہیں تھا ۔ فاضل عدالت نے مذکورہ اپیلیں خارج کرنے کا حکم دیا ہے۔علاوہ ازیں صوبائی حلقہ 213 کے امیدواران عدنان ڈوگر ، محمد زاہد ، صوبائی حلقہ 216 کے امیدوار خواجہ سلمان صدیقی اور صوبائی اسمبلی کے حلقہ 211 کے منور علی قریشی کی جانب سے کاغذات مسترد کے خلاف اپیلوں دائر کی گئیں تھیں کہ ان کو اس لیے نااہل کیا گیا کہ مذکورہ امیدواران اپنے اپنے حلقوں کی یونین کونسلوں کے چئیرمین ہیں اور ایک امیدوار 2 عہدے نہیں رکھ سکتا ہے ، فاضل عدالت میں مذکوران کے کونسل رانا آصف سعید نے دلائل دیے کہ 2 عہدے رکھنے والی شرط صرف بلدیاتی الیکشن کے لیے تشکیل دی گئی تھی جس کو کسی طور حکومت کی کاروائی پر غالب نہیں کیا جاسکتا ہے عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد، فیصلے کے لیے آج سماعت مقرر کی ہے۔ دریں اثناء4 پنجاب سو شل ویلفئر سیکورٹی نے قومی اسمبلی کے حلقہ 151 کے امیدوار ہمایوں خان کے خلاف درخواست دائر کی ہے کہ امیدوار نادہندہ ہے لیکن ریٹرننگ آفیسر کی جانب سے کاغذات منظور کرلیے گئے ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر