حادثات میں 7جاں بحق‘ خاتون کی مسخ شدہ لاش نہر سے برآمد

حادثات میں 7جاں بحق‘ خاتون کی مسخ شدہ لاش نہر سے برآمد

ڈہرکی‘ ماچھیوال‘ لودھراں‘ چوک سرور شہید‘ کوٹ ادو‘ فتح پور‘ شاہ جمال (نامہ نگار‘ نمائندہ پاکستان) حادثات نے 7افراد سے زندگی چھین لی۔ تین روز قبل لاپتہ ہونیوالی خاتوں کی مسخ (بقیہ نمبر44صفحہ12پر )

شدہ لاش سہر سے برآمد۔ اس حوالے سے ڈہرکی سے نامہ نگارکے مطابق ڈہرکی کے قریب المناک روڈحادثہ کراچی سے پنجاب جانے والی کوچ الٹ گئی جس کے باعث تین افرادجاں بحق چارخواتین اوردوبچوں سمیت تیس سے زائدمسافرشدیدزخمی ضلع بھر کی سرکاری ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافظ پندرہ تشویشناک حالت میں زخمیوں کورحیمیارمنتقل کیا گیا ۔تفصیلات کے مطابق ڈہرکی کے قریب قومی شاہرہ آدھی بنگلہ کے مقام پرکراچی سے پنجاب کے شہرصادق آباد جانے والی ایک تیزرفتارمسافرکوچ ڈرائیورسے بے قابوہوکر الٹ گئی جسکے نتیجہ میں پنجاب شہرٹوبہ ٹیگ سنگ کے رہائشی ذاکرحسین،اللہ یارسمت 3افراد موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے جبکہ پانچ خواتین اوردومعصوم بچوں سمیت 30 سے زائدمسافرشدیدزخمی ہوگئے جن میں برکت علی،محمدیونس،ظفراقبال،اللہ دتہ،غلام اصغر،محمداقبال، ،عبدالرزاق،امیربخش،عمرالدین،محمدرمضا ن،نورحسن،فرزانہ،حسن شہزاد،سیف الرحمناوردیگرشامل ہیں جنہیں ریسکیوٹیم نے ڈہرکی سول ہسپتال کے علاوہ اوباڑو میں منتقل کیا گیا اور15زخمی ہونے والے مسافروں کوتشویشناک حالت میں رحیمیارخان ہسپتال منتقل کیا گیا ہے ایسے حادثہ کے بعد ضلع بھرکی سرکاری ہسپتالوں میں ایمرجینسی نافظ کرکے تمام عملہ کوہسپتالوں میں حاضررہنے کا حکم دیا گیا پولیس نے کوچ کو اپنی تحویل میں لے کر ابتدائی رپورٹ درج کرلی ہے اور جاں بحق ہونے والے مسافروں کی نعشیں اپنے آبائی شہروں کوروانہ کردی گئی ہیں ۔ دریں اثناء ڈہرکی(نامہ نگار)ڈہرکی کے قریب ماہی واہ نہر میں گاؤں نؤں کوٹ کا رہائشی علی رضاگولو نہاتے ہوئے نہرمیں ڈوب گیا ورثا اوردیگرکی جانب سے اسکی لاش کی تلاش کی جارہی ہے لیکن آخری اطلاعات تک لاش نہیں مل سکی ہے۔ جبکہ ایک اورواقع میں پانچ سالہ بچہ عابدعلی گڈانی گھرمیں کھیلتے ہوئے بجلی کے تاروں سے کرنٹ لگنے کے باعث موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا ۔ ماچھیوالسے نمائندہ پاکستان ک مطابق نواحی گاؤں 561/EBکے رہائشی عبدالحمید کا بارہ سالہ بیٹا محمد مدثر سائیکل پر سوار گھر جارہا تھا کہ اچانک سائیکل سے گر گیا گرنے سے اور سپیڈ ٹریکٹر ٹرالی کی زد میں آکر جانبحق ہو گیا جبکہ پٹرولنگ پولیس کی غفلت کی وجہ سے ماچھیوال میں آئے روز حادثات معمول بن گئے۔لو د ہر ا ں سے نما ئند ہ پا کستا ن کے مطابق تیز ر فتا ر ی کے با عث دو مو ٹر سا ئیکل ٹکر ا نے سے ایک جا ں بحق دو سرا شد ید ز خمی‘ ر یسکیو ذ را ئع کے مطا بق د ھنو ٹ کے قر یب در با ر شیخ کبیر کے نز د یک تیز ر فتا ر ی کے باعث دو مو ٹر سا ئیکل آ پس میں ٹکر ا نے سے مختیا ر 45سا لہ جا ں بحق ہو گیا اور ا متیا ز چا لیس سا لہ شد ید زخمی ہو گیا جسے ر یسکیو 1122 نے طبی ا مد اد د ینے کے بعد ڈ سٹر کٹ ہیڈ کو ا ر ٹر ہسپتا ل منتقل کر د یا۔ چوک سرورشہیدسے نامہ نگارکے مطابق تین روز قبل وکیل والا فتح پور کی رہائشی خاتون خالدہ بی بی اپنے میکے گاؤں چوک سرورشہید کے علاقہ چک نمبر538/TDAمیں اپنے چچازاد محمد عرفان کی شادی میں شرکت کے لئے وکیل والافتح پورسے اپنے چھے بچوں اور خاوند محمد نذیرکے ہمراہ پہنچی۔بارات چوبارہ گئی تو خاتون خالدہ بی بی گھر سے اچانک لاپتہ ہوگئی ۔ شادی والا گھرپریشانی کا شکار ہوگئے ۔ہر جگہ تلاش شروع کی ۔لیکن کوئی پتہ نہ چل سکا ۔ تھانہ سرورشہید ، تھانہ چوک اعظم اور تھانہ فتح پور بھی اطلا ع دی گئی گزشتہ روز شام 8 بجے انہیں فیس بک کے ذریعہ پتہ چلا کہ تھانہ چوک اعظم میں نعش موجود ہے۔ اہل خانہ نے وہاں جاکرنعش کو شناخت کرلیا۔جو قریبی نہر حیات سے برآمد ہوئی تھی۔اورنعش لگتا تھا کہ اسے بہیمانہ طریقے سے قتل کرکے نہر میں پھینکا گیا ہے ۔اس کے ہاتھ بھی کٹے ہوئے تھے۔ اورچہر ہ بھی مسخ شدہ تھا۔ لیکن پولیس تھانہ چوک اعظم نے مبینہ طور نعش اور ورثاء کو کہا کہ یہ تھانہ فتح پور کا وقوعہ ہے ۔ اور انہیں تھانہ فتح پور روانہ کردیا ۔ ورثاء نعش لیکر فتح پور گئے تو تھانہ فتح پور نے تھانہ سرورشہید نعش بھیج دی تینوں تھانے کارروائی سے انکاری ہوگئے مقتولہ کے خاندان کے درجنوں افراد جمع ہوگئے اور دھمکی دی کہ ہم ایم ایم روڈ بند کردیں گے۔اور احتجاجی مظاہرہ کریں گے ۔ اورمعاملہ میڈیا میں آنے پر پولیس تھانہ سرورشہید نے مقتولہ کے والد محمد اسماعیل کی درخواست پر تین نامزد ملزمان محمد بوٹا،منیر، فاروق اور دو کس نامعلوم افراد کے خلاف زیر دفعہ 496A/302 ت پ مقدمہ درج کرلیا۔ شاہ جمال سے نمائندہ پا کستان کے مطابق چو ک مکول میں ایک سالہ بچی کھال میں ڈوب کر جاں بحق ہو گئی۔چوک مکول(گد پور) کے رہائشی عبدالحفیظ کی ایک سالہ بیٹی بشریٰ بی بی کھیلتے ہو ئے کھال میں گر گئی جسے رورل ہیلتھ سنٹر شاہ جمال میں بیہوشی کی حالت میں لایا جا رہا تھا کہ وہ راستہ میں ہی جا ں بحق ہو گئی تھی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر