مسلم لیگ (ن) کا اجلاس،زعیم قادری کی بغاوت سے پیدا صورتحال پر غور

مسلم لیگ (ن) کا اجلاس،زعیم قادری کی بغاوت سے پیدا صورتحال پر غور

لاہور(جنرل رپورٹر،نیوز ایجنسیاں) مسلم لیگ (ن)کے صدر شہباز شریف کی لندن سے لاہور واپسی کے بعد زعیم قادری کی بغاوت کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال پرپارٹی اراکین سے طویل مشاورت ،عوام رابطہ مہم اور ٹکٹوں کے حوالے سے آئندہ کی حکمت عملی بنائی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں مسلم لیگ(ن) کے ہونے والے اجلاس میں مر کزی اور صوبائی قائدین کے علاوہ حمزہ شہباز نے بھی شرکت کی۔اجلاس میں زعیم قادری کی بغاوت کے بعد کی صورتحال سمیت مسلم لیگ (ن) کے ٹکٹوں کی تقسیم کے معاملے پر بھی مشاورت کی گئی۔بعد ازاں شہباز شریف سے امیر مقام اور مرتضیٰ جاویدعباسی نے ملاقات کی، اس موقع پر امیرمقام نے خیبر پختونخوا میں انتخابی مہم اور ٹکٹوں کی تقسیم سے متعلق تجاویز پیش کیں۔مسلم لیگ(ن) کے صدر میاں شہباز شریف نے خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی کی ناقص کارکردگی عوام کے سامنے لانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ خیبر پختونخوا کے عوام مسلم لیگ (ن) سے والہانہ محبت کرتے ہیں ۔ ہماری کارکردگی عوام کے سامنے ہے جبکہ تحریک انصاف کے پاس دکھانے کیلئے کچھ نہیں۔دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کے باغی رہنماء سید زعیم حسین قادری نے مسلم لیگ (ن) سے متعلق اپنے فیصلہ پر نظرثانی نہ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ آزاد حیثیت میں لاہور سے قومی اسمبلی کا الیکشن لڑنے کا فیصلہ حتمی ہے، تحریک انصاف میں شامل نہیں ہوں گا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے زعیم حسین قادری کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف اور میرے درمیان کوئی رابطہ نہیں ہوا، میں مسلم لیگ (ن) کے حوالے سے اپنے فیصلے پر نظرثانی نہیں کروں گا۔ جب میں نے فیصلہ تبدیل نہیں کرنا تو رابطوں کی کوئی اہمیت اور ضرورت نہیں۔انہوں نے کہا کہ آزاد حیثیت میں قومی اسمبلی کا انتخاب لڑنے کا فیصلہ حتمی ہے۔پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کی دعوت قبول کرنے سے متعلق سوال پر زعیم قادری نے کہا کہ میں پی ٹی آئی میں شامل نہیں ہوں گا، میں اپنی جگہ پر مضبوطی سے کھڑا ہوں۔

مسلم لیگ(ن)/زعیم قادری

مزید : کراچی صفحہ اول