آئندہ انتخابات میں پخٹون قوم کی بقاء کا فیصلہ ہو گا:حیدر ہوتی

آئندہ انتخابات میں پخٹون قوم کی بقاء کا فیصلہ ہو گا:حیدر ہوتی

نوشہرہ(بیورورپورٹ)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر سابق وزیراعلیٰ امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ 2018 کے عام انتخابات پختون قوم کی بقاء کے لئے لڑ رہے ہیں اس انتخابات میں ملک کے دیگر تین صوبوں کے عوام کی ترقی کے لئے جبکہ پختون قوم کی بقاء کا فیصلہ ہوگا ملک کی چند نادیدہ قوتیں پختون قوم کو محکوم بنانے کی ایک ناکام کوشش میں لگی ہوئی ہے جو عوامی نیشنل پارٹی کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دے گی جو ظلم پختون قوم کے ساتھ ہونا تھا وہ ہو چکا اب مزید پختون قوم کو محکوم بنانے اور پختونوں کے خلاف سازشوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے اب پختون قوم اپنی بقاء کی جنگ لڑنے کیلئے متحد ہوچکے ہیں پختونوں کا شیرازہ بکھرنے کا خواب چکنا چور ہوجائے گا ان خیالات کااظہارانہوں نے نوشہرہ کے علاقہ خویشگی میں شمولیتی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر این اے 26 کے نامزد امیدوار جمال خٹک، پی کے 61 کے امیدوار پرویز احمد خان، انجینئر حامد علی خان، سابق جنرل سیکرٹری خوشحال خان، نورعالم ایڈوکیٹ، نعمان الحق کاکاخیل اور دیگر بھی موجود تھے جبکہ کونسلر فرشادعلی اوردیگر نے خویشگی بالا وپایان کے 50خاندانوں سمیت پی ٹی آئی سے مستعفی ہوکر خویشگی سے پی ٹی آئی کا صفایا کرکے عوامی نیشنل پارٹی میں شمولیت کااعلان کردیا جلسے سے خطاب کرتے ہوئے امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ پرویز خٹک اقتدار کی کرسی کے نشے میں دھت سٹیج پر کہتا تھا کہ اے این پی ختم ہوگئی ہے اے این پی کو فرنگ جنرل ایوب، جنرل ضیاء اور جنرل پرویز مشرف کی مارشل لاء ختم نہ کرسکی تو پرویز خٹک جیسا سیاسی خانہ بدوش کیا ختم کرے گا عوامی نیشنل پارٹی کا مقابلہ نظریاتی لیڈرشپ کے ساتھ ہے لوٹوں کے لیڈرشپ کے ساتھ نہیں اور پرویز خٹک اس صوبے کا سب سے بڑا لوٹا اور کرپٹ شخص ہے ایک کرپٹ شخص صوبے کو کرپشن سے پاک کیسا کرسکتا ہے پرویز خٹک کا صوبے کو فری کرپشن زون قرار دینا ایسا ہے جیسے دن میں تارے انہوں نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی صوبے کی ناکام ترین حکومت تھی مجھے پرویز خٹک کا وزارت اعلیٰ میں رہنے کے بعد نوشہرہ کے عوام پر ترس آتا ہے کیا پرویز خٹک وزیراعلیٰ کے اختیار سے واقف نہیں تھا یا وہ جان بوجھ کر نوشہرہ کو ترقی نہیں دینا چاہتا تھا ترقی کی مثال دیکھنا ہے تو مردان آکر دیکھ لو انہوں نے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی کے کارکن متحد ہوکر 2018 کے انتخابات میں اپنے امیدواروں کو کامیاب بنائیں ۔

مزید : کراچی صفحہ اول