چارسدہ ،دوہرے قتل میں ملوث ملزم نے سگے بھائی کی زندگی اجیرن کردی

چارسدہ ،دوہرے قتل میں ملوث ملزم نے سگے بھائی کی زندگی اجیرن کردی

چارسدہ (بیورو رپورٹ) دوہرے قتل میں ملوث ملزم نے سگے بھائی کی زندگی اجیرن بنا دی ۔ ملزم نے گھر ہتھیانے کیلئے اپنی ادھیڑ عمر سالی سے میری شادی کر الی جس نے تین سال بعد مجھ سے حلع حاصل کی مگر میرے مطلقہ بیوی نے میرے بھائی کے اشیر باد سے اب بھی میرے گھر پر قبضہ کیا ہو ا ہے ۔ بھائی قتل کی دھمکیاں دے رہا ہے اور کئی بار قاتلانہ حملہ بھی کیا مگر پولیس نے آنکھیں بند کئے ہوئی ہے ۔ شہری زرداد علی کی فریاد ۔ تفصیلات کے مطا بق رجڑ دیشانو بابا سولئی کمر سے تعلق رکھنے والے مقامی شہری زرداد ولد صفدر خان نے میڈیا کو بتایا کہ کم عمری میں ان کے بھائی گلزار نے ان کی شادی اپنے ادھیڑ عمر سالی مسماۃ انور بیگم زوجہ محمدی گل سے کرائی مگر تین سال بعد انہوں نے مجھ سے حلع لی جس کے بعد بھائی نے مجھے گھر سے زبر دستی نکالا۔ بعد ازاں انہوں نے دوسری شادی کر لی جس سے ان کے دو بچے ہیں اور اب وہ روالپنڈی میں کرایہ کے گھر میں مقیم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ ایک غریب آدمی ہے اور گھر کا کرایہ تک برداشت نہیں کر سکتے مگر بھائی کے اشیر باد سے ان کی سابقہ بیوی نے گھر پر قبضہ جما رکھا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کا بھائی گلزار دوہرے قتل کے الزام میں پولیس کو مطلوب ہے مگر پولیس ان کو گرفتار کرنے کی بجائے تحفظ فراہم کر رہی ہے کیونکہ وہ پولیس حکام کے جیب گرم کرتا ہے ۔ اپنے گھر کے حوالے سے پوچھنے پر ملزم مجھے قتل کی دھمکیاں دیتے ہیں اور کئی بار مجھ پر قاتلانہ حملہ بھی کیا ہے ۔ ملزم نے کئی بار راولپنڈی میں بھی مجھ پر حملہ کیا ہے ۔ انہوں نے نادار حکام سے اپیل کی کہ ان کے سابقہ بیوی کے شناختی کارڈ سے ان کی زوجیت ختم کی جائے ۔ زرداد علی نے چیف جسٹس آف پاکستان اور پولیس کے ذمہ دار حکام سے مطالبہ کیا کہ ملزم کو دوہرے قتل کے الزام سمیت ان پر حملوں اور گھر پر قبضے کے جرم میں فوری طور پر گرفتار کرکے ان کو انصاف فراہم کریں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر