کسی سے کوئی خوف نہیں، مجبوری ہے الیکشن میں حصہ نہیں لے سکتا: جہانگیر ترین

کسی سے کوئی خوف نہیں، مجبوری ہے الیکشن میں حصہ نہیں لے سکتا: جہانگیر ترین
کسی سے کوئی خوف نہیں، مجبوری ہے الیکشن میں حصہ نہیں لے سکتا: جہانگیر ترین

  

لودھراں(ڈیلی پاکستان آن لائن) تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کا کہنا ہے کہ کسی سے ڈرتے ہیں نہ خوف میں ہیں ہم مقابلہ کرنا جانتے ہیں اور مجبوری ہے کہ الیکشن میں حصہ نہیں لے سکتا۔

گزشتہ روز پی ٹی آئی کے وائس چیئرمین شاہ محمود اور جہانگیر ترین کے درمیان لفظی جنگ ہوئی، شاہ محمود قریشی نے جہانگیر ترین پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ایسے شخص سے کوئی مقابلہ نہیں جو الیکشن میں حصہ نہیں لے سکتا جبکہ جہانگیر ترین کا کہنا تھاکہ شاہ محمود جواب دینے قابل نہیں۔

لودھراں میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے کہاکہ شاہ محمود قریشی کی پریس کانفرنس پر کوئی بات نہیں کروں گا، غیر مناسب بات ہے کہ میں شاہ محمود کی بات پر کمنٹ کروں، پریس کانفرنس کے ذریعے پی ٹی آئی کے کسی بھی لیڈر کی ایسی بات نہیں ہونی چاہیے، تحریک انصاف میں ایسی باتیں نہیں کی جاسکتیں۔

پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ آپس کی لڑائیاں منظرعام پرنہیں آنی چاہئیں اور بندکمرے میں فیصلہ کرناچاہیے، آپس کی بات میڈیا میں کرنا غیرمناسب ہے، یہ بالکل بھول جائیں کہ کسی سے ڈرتے ہیں یا کسی سے خوف میں ہیں، ہم مقابلہ کرناجانتے ہیں، میں جرات مندانہ فیصلے کرتا ہوں، سیاست میں ڈیڈلاک ہوتے ہیں، ٹوٹے بھی ہیں چیزیں بنتی اور بگڑتی بھی ہیں۔

جہانگیر ترین کا کہنا تھاکہ کوئی نہیں کہہ سکتاکہ میں اپنی ذات کےلئے کوشش کررہا ہوں، میں اور میرا بیٹا الیکشن نہیں لڑرہے، میری اور میرے بیٹے کی مجبوری ہے کہ الیکشن میں حصہ نہیں لے سکتے، میرا بیٹا برطانیہ میں آج بھی امتحان دے رہا ہے۔

پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ ہمارے لیے عمران خان کا نظریہ پہلے اور ذات بعد میں ہے، نئے پاکستان کےلئے عمران خان کا وزیراعظم بننا لازم ہے۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لودھراں