”عمر کا ہی لحاظ کر لیں اور۔۔۔“ عید کے موقع پر بشریٰ انصاری نے کیسے کپڑے پہنے تھے؟ تصاویر سامنے آئیں تو پاکستانی غصے سے آگ بگولہ ہو گئے، وہ کچھ کہہ دیا کہ آئندہ کوئی لباس پہننے سے پہلے ہزار بار سوچیں گی

”عمر کا ہی لحاظ کر لیں اور۔۔۔“ عید کے موقع پر بشریٰ انصاری نے کیسے کپڑے پہنے ...
”عمر کا ہی لحاظ کر لیں اور۔۔۔“ عید کے موقع پر بشریٰ انصاری نے کیسے کپڑے پہنے تھے؟ تصاویر سامنے آئیں تو پاکستانی غصے سے آگ بگولہ ہو گئے، وہ کچھ کہہ دیا کہ آئندہ کوئی لباس پہننے سے پہلے ہزار بار سوچیں گی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) بشریٰ انصاری کا شمار پاکستان کی صف اول کی اداکاراﺅں میں ہوتا ہے جنہوں نے 2 دہائیوں سے زیادہ ٹی وی انڈسٹری میں کام کیا ہے اور اس وقت سے کام کر رہی ہیں جب صرف ایک یا دو ٹی وی چینل ہوا کرتے تھے اور ڈرامہ سیریلز کی تعداد بھی بہت کم تھی۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔مصری شہری فٹ بال ورلڈکپ کا میچ دیکھ کر گھر آیا تو بیوی اور بیٹیوں کو ایسی حالت میں دیکھ لیا کہ قیامت ٹوٹ پڑی، پورے ملک میں ہنگامہ برپا ہو گیا 

بشریٰ انصاری اپنی بہترین اداکاری اور کامیڈی کے باعث شہرت رکھتی ہیں اور ان کے لباس کی بھی خوب تعریف ہوتی ہے لیکن عید کے موقع پر انہوں نے ایسا لباس پہن لیا کہ پاکستانی غصے سے آگ بگولہ ہو گیا اور وہ کچھ کہہ دیا جس کا انہوں نے تصور بھی نہ کیا ہو گا۔

عید کے موقع پر وہ ایک جگہ ڈنر پر گئیں تو ماریہ واسطی اور عائشہ عمر کیساتھ تصاویر بھی بنوائیں اور جب یہ تصاویر سامنے آئیں تو پاکستانی انہیں مغربی لباس میں دیکھ کر حیران رہ گئے۔ اس موقع پر ان کی بھانجی زارا اور اس کے شوہر بھی موجود تھے جن کیساتھ تصاویر بنواتے ہوئے بشریٰ انصاری بہت خوش نظر آئیں۔

پاکستانیوں نے تصاویر میں موجود دیگر لوگوں کو تو بہت پسند کیا مگر بشریٰ انصاری کا لباس انہیں ایک آنکھ نہیں بھایا اور کسی نے انہیں عمر کا لحاظ کرنے کو کہا تو کوئی ’بوڑھی گوڑھی لال لگام‘ کے طعنے دینے لگا۔

کومل اکبر نے لکھا ”کم از کم اپنی عمر ہی دیکھے یہ بشری! بہت ہی بیہودہ“

شازف ملک نے لکھا ”ایسا لگ رہا ہے کہ جیسے کسی نے بشریٰ انصاری کا سر کاٹ کر کسی بولڈ نوجوان لڑکی کے جسم پر لگا دیا ہے۔۔۔ یہ لباس تو انہیں بالکل بھی اچھا نہیں لگ رہا“

زینب اقبال نے لکھا ”انہوں نے ’بوڑھی گھوڑی لال لگام‘ والی مثال کو بہت سنجیدگی سے لے لیا ہے“

حسن سلیم نے لکھا ”دیکھو!!! تقریبات اس طرح سے بھی منائی جا سکتی ہیں، آپ کو بالکل سادہ رہنے یا پھر سوٹ بوٹ کسنے کی ضرورت بھی نہیں ہوتی“

پرنس سیال نے لکھا ”واﺅوووو ۔۔۔ بہت اچھے بشریٰ آنٹی۔۔۔ کمال کی لگ رہی ہیں“

اس سے قبل بھی بشریٰ انصاری کو اس وقت تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا جب انہوں نے بازوﺅں کے بغیر کالے رنگ کا لباس پہنا تھا۔

جیسا کہ سب کو ہی معلوم ہے کہ سوشل میڈیا پر جہاں مداحوں کی بڑی تعداد موجود ہے تو وہیں تنقید کرنے والوں کی بھی کمی نہیں ہے اس لئے بشریٰ انصاری یا تو ایسے لباس پہننا چھوڑ دیں یا پھر ایسی باتوں پر بالکل ہی غور نہ کریں کیونکہ یہ ان کی زندگی ہے اور وہ جیسا چاہیں لباس پہننے کی مکمل آزادی رکھتی ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /تفریح