’بالی ووڈ میں اس فحش تجربے کے بعد میں نے وہاں کام نہ کرنے کی قسم کھا رکھی ہے‘ نیرو باجوہ نے بھارتی فلم انڈسٹری کا گھناﺅنا چہرہ بے نقاب کردیا

’بالی ووڈ میں اس فحش تجربے کے بعد میں نے وہاں کام نہ کرنے کی قسم کھا رکھی ہے‘ ...
’بالی ووڈ میں اس فحش تجربے کے بعد میں نے وہاں کام نہ کرنے کی قسم کھا رکھی ہے‘ نیرو باجوہ نے بھارتی فلم انڈسٹری کا گھناﺅنا چہرہ بے نقاب کردیا

  


چندی گڑھ (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی پنجاب کی فلم انڈسٹری کی سب سے مشہور اداکارہ نیرو باجوہ نے کہا ہے کہ انہیں ایک فحش تجربے سے گزرنا پڑا تھا جس کے باعث انہوں نے بالی ووڈ میں کام نہ کرنے کی قسم کھائی تھی۔

لونگ لاچی گانے کے ذریعے پورے انڈیا میں اپنی دھاک بٹھانے والی اداکارہ نیرو باجوہ کی 21 جون کودلجیت دوسانج کے ساتھ فلم ’شاڈا‘ ریلیز ہوئی ہے۔ اسی فلم کی پرموشن کے سلسلے میں دیے گئے ایک انٹرویو کے دوران جب ان سے یہ پوچھا گیا کہ وہ بالی ووڈ میں ڈیبیو کرنے کے بعد اس انڈسٹری سے غائب کیوں ہوگئیں۔

اس سوال کے جواب میں نیرو باجوہ نے کہا کہ بالی ووڈ میں انہیں ایک میٹنگ کے دوران انتہائی فحش تجربے سے گزرنا پڑا جس کے باعث انہوں نے بھارت کی سب سے بڑی انڈسٹری سے کنارہ کشی اختیار کرلی۔ انہوں نے کہا ’ میٹنگ میں مجھ سے کہا گیا کہ یہاں رہنے کیلئے آپ کو یہ کرنا ہوگا، اس سے میں کافی ہل گئی تھی۔‘

نیرو باجوہ نے انٹرویو کے دوران اپنے تلخ تجربے کا کسی پر الزام نہیں لگایا اور نہ ہی کسی کا نام لیا لیکن ان کا کہنا تھا ’ میں یہ نہیں کہہ رہی ہوں کہ انڈسٹری میں ایسے ہی کام ہوتا ہے لیکن میں ان بدقسمت اداکاراﺅں میں سے ہوں جنہیں تلخ تجربے ہوئے ہیں۔ اس کے بعد سے میں نے بالی ووڈ میں اپنی قسمت نہیں آزمائی اور نہ ہی کبھی وہاں جاﺅں گی، میں اپنے پنجابی سنیما اسپیس سے خوش ہوں۔‘

خیال رہے کہ نیرو باجوہ نے 1998 میں دیو آنند کی فلم ”16 برس کی“ سے فلم انڈسٹری میں ڈیبیو کیا تھا لیکن جلد ہی وہ پنجابی فلموں کی طرف منتقل ہوگئیں اور دوبارہ بالی ووڈ کا رخ نہیں کیا۔ اس وقت وہ بھارتی پنجاب کی فلم انڈسٹری کا سب سے بڑا نام ہیں، ان کی فلم کا گانا ’ لونگ لاچی‘ یوٹیوب پر بھارت کی تاریخ کا سب سے زیادہ سنا جانے والا گانا بن چکا ہے، اسے اب تک 85 کروڑ 39 لاکھ سے زائد لوگ دیکھ چکے ہیں۔

مزید : تفریح