کیا یونس خان کو مصباح کی فیس سیونگ کیلئے رکھا گیا ہے؟ وسیم خان نے بالآخر اس سوال کا جواب دیدیا

کیا یونس خان کو مصباح کی فیس سیونگ کیلئے رکھا گیا ہے؟ وسیم خان نے بالآخر اس ...
کیا یونس خان کو مصباح کی فیس سیونگ کیلئے رکھا گیا ہے؟ وسیم خان نے بالآخر اس سوال کا جواب دیدیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) وسیم خان نے کہا ہے کہ یونس خان کو مصباح الحق کی فیس سیونگ کیلئے نہیں رکھا گیا، دنیا میں اور بھی جگہ بیٹسمین ہیڈکوچ ہوتے ہوئے بیٹنگ کوچ رکھے گئے۔

نجی ٹی وی کو دئیے گئے انٹرویو میں وسیم خان نے کہا کہ عالمی کرکٹ کیلئے ضروری تھا کہ کرکٹ جلد از جلد بحال ہو، پی سی بی نے انگلینڈ سے تمام معاملات پر تفصیلی بات چیت اور بائیو سیکیور ماحول میں پلیئرز کی حفاظت کو یقینی بنانے کے بعد دورے کا فیصلہ کیا ہے۔ قومی ٹیم 28 جون کو چارٹرڈ فلائٹ کے ذریعے انگلینڈ روانہ ہوجائے گی اور ابتدائی ٹریننگ اور قرنطینہ کے دن ڈربی اور ووسٹر میں گزریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی پلیئرز 6ماہ بعد کرکٹ ایکشن میں ہوں گے، وہ بھی بے تاب ہیں کہ کرکٹ کھیلیں اور دنیا بھی منتظر ہے، کرکٹ کا ہونا ضروری بھی ہے کیونکہ بورڈز کو اپنے معاملات بھی چلانے ہیں۔ پاکستانی کرکٹرزکو انگلینڈ کے خلاف سیریز سے قبل ایک ماہ ٹریننگ کا موقع ملے گا جس میں وہ سیریز کی بھرپور تیاری کرپائیں گے۔

چیف ایگزیکٹو پی سی بی نے ٹیم کے ساتھ 14 رکنی سٹاف کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ اس سے پہلے بھی زیادہ سے زیادہ سٹاف ٹیم کے ساتھ گیا ہے،اس بار 29 پلیئرز کے ساتھ 14 کا سٹاف جارہا ہے جس میں کچھ کوچز ہیں کیونکہ 29 کا گروپ ہے جس نے مختلف چھوٹے چھوٹے گروپس میں ٹریننگ کرنی ہے، ماضی میں کم پلیئرز پر بھی بڑا اسٹاف ساتھ ہوتا تھا۔

یونس خان کو دورہ انگلینڈ کیلئے بیٹنگ کوچ تعینات کرنے سے متعلق سوال پر ان کا کہنا تھا کہ یونس خان کو مصباح کی ڈھال کے طور پر نہیں لائے، انگلینڈ میں ٹریور بیلس یا آسٹریلیا میں جسٹن لینگر بھی بیٹسمین تھے لیکن انہوں بھی بیٹنگ کوچز رکھے تھے، ہیڈ کوچ کے ساتھ سپیشلسٹ سٹاف ہوتا ہے۔

مزید :

کھیل -