پنجاب اسمبلی، بجٹ پر بحث کے دوران وزیر خزانہ سیکرٹری خزانہ کی عدم موجودگی، ایوان کااظہار برہمی

  پنجاب اسمبلی، بجٹ پر بحث کے دوران وزیر خزانہ سیکرٹری خزانہ کی عدم موجودگی، ...

  

لاہور(آئی این پی) پنجاب اسمبلی میں بجٹ2020/21پر بحث کے دوران ایک بار پھر ایوان میں وزیر خزانہ اور سیکرٹری خزانہ کی عدم موجودگی پر اظہار برہمی‘ڈپٹی سپیکرسردار دوست محمد مزاری نے صوبائی وزیر قانون راجہ محمد بشارت کو معاملہ وزیر اعلی پنجاب کے نوٹس میں لانے کی ہدایت کردی‘پیپلزپارٹی نے جنوبی پنجاب کے عوام کیلئے پنجاب پبلک سروس کمیشن اور این ایف سی ایوارڈ میں حصہ مانگ لیا جبکہ (ن) لیگ کے اراکین سمیع اللہ خان اور رانا مشہود احمد خان نے کہا کہ پنجاب کا بجٹ اس وزیر خزانہ نے پیش کیا ہے جسکی فیملی کے اثاثے حکومت آنے سے قبل چھ کروڑ آج سو ارب سے زائد ہیں عمران خان کے نئے پاکستان میں عام آدمی اور اشرافیہ کیلئے دو پاکستان ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی سپیکر دوست مزاری کی زیر صدارت ایک گھنٹہ دس منٹ تاخیر سے شروع ہوااجلاس میں لیگی ایم این اے کی وفات پر ایوان میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی،بجٹ پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے سابق سپیکر پنجاب اسمبلی رانا محمد اقبال نے کہا کہ بجٹ تیزی اور محنت سے تو بنایا گیا جسے دیکھ کر بے بسی محسوس کی جا سکتی ہے،بجٹ بنانے میں سرکاری ملازمین دست و بازو ہوتے ہیں انکے لیے کچھ نہیں کیا گیایہ بجٹ آئی ایم ایف کا بجٹ ہے حکومت گھبرائی ہو ئی ہے ن لیگ کے دور میں سڑکوں پر سفر کرتے تھے تو سکون محسوس کرتے تھے اس حکومت نے روڈ ڈویلپمنٹ کے بجٹ پر ستاسٹھ فیصد کٹ لگا دیا ہے لاہور میں انڈرپاسز اور سڑکیں بنائی گئیں شہباز شریف نے اسکو گارڈن آف فالورز بنایا۔پیپلز پارٹی کے سیدعلی حیدر گیلانی نے ایوان میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ کورونا متاثرین کی صحت یابی کے لیے دعا گو ہیں ہمارا تعلق جنوبی پنجاب سے ہے دہائیوں سے خطہ محرومیوں کا شکار ہے دو ہزار اٹھارہ میں جنوبی پنجاب کو سو دن میں صوبہ بنانے کا وعدہ کیا گیا تھااب چھ سو دن گزرنے کے بعد جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ بنایا جا رہا ہے ہم جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو مسترد کرتے ہیں،تحریک انصاف کی نیلم حیات نے بجٹ پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پوری دنیا کرونا کا شکار ہے معیشت سکڑ چکی ہے ان حالات میں بجٹ تازہ ہوا کا جھونکا ہے،بجٹ میں عام آدمی کو ٹیکس ریلیف دیا گیا ٹیکس فری بجٹ پیش کیا گیا ہے مستحق افراد کے لیے خصوصی بجٹ مختص کیاجائے ن لیگ نے آج تک ٹرانسجینڈر کے لیے کارڈ تک نہیں بنایا ہم نے ٹرانسجینڈر کو حقوق دیے شناخت دی ہے ن لیگ کے کون کون سے کیس کھلے جائیں انکوئریز ختم ہو جائیں گی لیکن انکے کیس ختم نہی ہونگے۔

پنجاب

مزید :

صفحہ آخر -