سعودی عرب کا رواں سال محدود حج کا اعلان، کورونا وائرس کی عالمی وباء کے باعث صرف سرزمین حجاز میں مقیم دنیا بھر کے فرزند اسلام کو ہی مذہبی فریضہ ادا کرنے کی اجازت ہو گی

سعودی عرب کا رواں سال محدود حج کا اعلان، کورونا وائرس کی عالمی وباء کے باعث ...

  

ریاض،جدہ (اکرم اسد) سعودی عرب نے اعلان کیا ہے کہ رواں سال محدود حج ہو گا۔سعودی خبر رساں ادارے کے مطابق سعودی وزارت حج نے اعلان کیا ہے کہ امسال محدود حج ہوگا۔ دنیا کے 180 سے زیادہ ملکوں میں نئے کورونا وائرس کی وباء کے پیش نظر محدود تعداد میں اندرون ملک سے مختلف ممالک کے شہریوں کو حج کا موقع دیا جائیگا۔ ایس پی اے کے مطابق وزارت حج نے بیان میں کہا ہے کہ کورونا کی وبا کے ماحول، دنیا بھر میں وائرس کے پھیلنے کے خطرات اور روز بروز دنیا بھر میں متاثرین کی تعداد میں اضافے کے پیش نظر طے کیا گیا ہے کہ اس سال حج میں اندرون ملک سے مختلف ممالک کے عازمین کو محدود تعداد میں شریک کیا جائے گا۔بیان میں کہا گیا کہ یہ فیصلہ اس بنیاد پر کیا گیا ہے کہ حج محفوظ صحت ماحول میں ہو۔ کورونا سے بچاؤ کے تقاضے پورے کیے جائیں۔ عازمین حج کی سلامتی کو یقینی بنانے کیلئے سماجی فاصلہ برقرار رکھا جاسکے اور انسانی جان کے تحفظ سے متعلق اسلا می شریعت کے مقاصد پورے کیے جاسکیں۔سعودی حکومت جو ہر سال حج اور عمرے پر آنیوالے لاکھوں فرزندان اسلام کی خدمت کا اعزاز حاصل کرتی ہے، دنیا بھر کے مسلمانوں کو یقین دلانا چاہتی ہے کہ یہ فیصلہ حرمین شریفین کے زائرین کی صحت و سلامتی کے جذبے سے کیا گیا ہے۔ سعودی گیزٹ کی رپورٹ کے مطابق رواں سال سعودی عرب میں مقیم مختلف ممالک سے تعلق رکھنے والے افراد حج کرسکیں گے۔ رواں سال کورونا وبا کی وجہ سے دنیا بھر سے عازمینِ حج کو ہدایت کی گئی تھی کہ وہ حج کی تیاری کو فی الحال موخر کردیں کیونکہ حج کروانے یا نہ کروانے کے حوالے سے فیصلہ کیا جانا تھا۔اب سعودی عرب کی جانب سے فیصلہ کر لیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ رواں سال مملکت میں مقیم مختلف ممالک کے لوگ حج کر سکیں گے۔ وزارت حج نے اپنا بیان اس دعا پر ختم کیا کہ اللہ تعالی دنیا کے تمام ممالک کو اس وبا سے تحفظ فراہم کرے اور ہر آفت سے بنی نوع انساں کی حفاظت کرے۔ اللہ تعالی ہر چیز پر قادر ہے۔ واضح رہے کہ سعودی عرب میں کورونا کے مجموعی کیسز کی تعداد 1لاکھ 61ہزار5 ہوگئی ہے جبکہ کورونا سے اب تک ہونیوالی اموات کی کل گنتی 1307تک پہنچ چکی ہے۔ان حالات میں معمول کے مطابق حج کروانا بہت مشکل ہوگیا ہے کیونکہ لاکھوں لوگوں کے دنیا بھر سے آنے کی صورت میں وبا پر قابو پانا ناممکن ہوجائیگا۔ اسی لیے سعودی حکو مت حج کی ادائیگی کے حوالے سے غور کر رہی تھی اور اب فیصلہ کرلیا گیا ہے کہ دوسرے مملک سے عازمین حج کیلئے نہیں آئیں گے اور ملک میں مقیم افراد حج کر سکیں گے۔ رواں سال محدود تعداد میں عازمین حج کریں گے۔ دنیا بھر سے عازمین حج ادا نہیں آسکیں گے لیکن یہ بات لاکھوں مسلمانوں کیلئے سکون کا باعث ہے کہ تمام تر حالات کے باجود حج کو منسوخ نہیں کیا گیا اور محدود لوگوں کیساتھ ہی صحیح لیکن حج لازمی ادا ہوگا۔

محدود حج

مزید :

صفحہ اول -