تجارتی پالیسی میں سرمایہ کاروں کی تجاویز شامل کی جائیں، ٹیکسٹائل ایسوسی ایشن

      تجارتی پالیسی میں سرمایہ کاروں کی تجاویز شامل کی جائیں، ٹیکسٹائل ...

  

فیصل آباد (اے پی پی) پاکستان ٹیکسٹائل ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین سہیل پاشا نے کہا کہ اگلی 5 سالہ ٹریڈ پالیسی 2020-25 ء میں سٹیک ہولڈرز کی دی گئی تجاویزکو بھی شامل کیا جائے تاکہ نئے مالی سال کے میزانیہ میں مقرر کئے گئے اہداف کا حصول ممکن ہوسکے جبکہ پاکستان میں بر ۱ٓمدات بڑھانے کا بہت پوٹینشل موجود ہے لیکن بجلی،گیس، خام مال کی خطہ کے دیگر ممالک سے زیادہ قیمتیں سب سے بڑی رکاوٹ بن رہی ہیں جس کے ساتھ ساتھ مصنوعات کی کاروباری و پیداواری لاگت زیادہ ہونے کی وجہ سے 40 ارب ڈالر کا بر۱ٓمدی ہدف مشکل نظر ۱ٓ رہا ہے۔ اے پی پی سے بات چیت کے دوران انہوں نے کہا کہ ملکی بر ۱ٓمدات میں مسلسل کمی اور نئی ٹریڈ پالیسی لانے میں تاخیر سے متعلقہ سٹیک ہولڈرز میں پریشانی پائی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ متعلقہ اداروں کو ۱ٓئندہ ٹریڈ پالیسی کامیاب بنانے کیلئے سابقہ تجارتی پالیسیوں کے مثبت و منفی اثرات وپالیسی کی کامیابی کے امکانات اوراس کے مضمرات ووجوہات کو بھی پیش نظر رکھنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ وہ پہلے بھی بار بار گزارش کر چکے ہیں اور متعلقہ ارباب اختیار کو بھی اس سلسلہ میں مکمل ۱ٓگاہی حاصل ہے کہ صنعتوں کیلئے گیس و بجلی کی قیمتیں خطہ کے دیگر ممالک کی نسبت بہت زیادہ ہیں اسلئے جب تک ان کی قیمتیں اعتدال پر دیگر ممالک کے برابر نہیں لائی جائیں گی اور اس ضمن میں کسی خصوصی پیکیج اور ٹیکسوں میں کمی کا اعلان نہیں کیا جا ئے گا اس وقت تک ہم عالمی منڈیوں میں غیر ممالک کی سستی مصنوعات کا مقابلہ نہیں کر سکتے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ حکومت نئی ٹریڈ پالیسی کی تشکیل میں اس اہم ترین پوائنٹ کو ضرور مد نظر رکھے گی تاکہ پالیسی کے اصل اہداف حاصل کر نے میں کسی مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

مزید :

کامرس -