حکومت کی کچھ ذمہ داریاں ہیں اوروہ عوام کوجوابدہ ہے،اسلام آبادہائیکورٹ،آئل کمپنی کی ایف آئی اے کوفوری کارروائی سے روکنے کی استدعامسترد

حکومت کی کچھ ذمہ داریاں ہیں اوروہ عوام کوجوابدہ ہے،اسلام آبادہائیکورٹ،آئل ...
حکومت کی کچھ ذمہ داریاں ہیں اوروہ عوام کوجوابدہ ہے،اسلام آبادہائیکورٹ،آئل کمپنی کی ایف آئی اے کوفوری کارروائی سے روکنے کی استدعامسترد

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آبادہائیکورٹ نے پٹرولیم مصنوعات کی ذخیرہ اندوزی پرحکومتی کارروائی کیخلاف درخواست پر آئل کمپنی کی ایف آئی اے کوفوری کارروائی سے روکنے کی استدعامستردکرتے ہوئے وزارت توانائی،اوگرا،فیول کرائسسزکمیٹی،ایف آئی اے کو 25جون کیلئے نوٹس جاری کردیئے۔

نجی ٹی وی کے مطابق آئل کمپنی نے ایف آئی اے کے نوٹس کوچیلنج کررکھاہے،اسلام آبادہائیکورٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی ذخیرہ اندوزی پر حکومتی کارروائی کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست پر سماعت کی،درخواست گزار کی جانب سے موقف اختیار کیاگیا کہ حکومت نے انکوائری ایکٹ کے تحت کمیشن قائم نہیں کیا،عدالت نے کہاکہ تحقیقات کیلئے انکوائری ایکٹ کے تحت کمیشن ضروری نہیں۔

چیف جسٹس ہائیکورٹ نے کہاکہ مطمئن کریں ایگزیکٹوکے اختیارات میں کیوں مداخلت کریں؟،عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ حکومت کی کچھ ذمہ داریاں ہیں اوروہ عوام کوجوابدہ ہے،فیول سپلائی میں خلل پرایگزیکٹوکوانکوائری کااختیارہے۔

عدالت نے آئل کمپنی کی ایف آئی اے کوفوری کارروائی سے روکنے کی استدعامستردکرتے ہوئے وزارت توانائی،اوگرا،فیول کرائسسزکمیٹی،ایف آئی اے کو 25جون کیلئے نوٹس جاری کردیئے،چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ نے دلائل سننے کے بعدنوٹس جاری کئے، عدالت نے حکم امتناع کی درخواست پربھی نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -اسلام آباد -