”سپریم کورٹ کافیصلہ آنے تک درخواست نہیں سن سکتے“،سندھ ہائیکورٹ نے سٹیل لیبریونین کی نجکاری کیخلاف درخواست نمٹا دی

”سپریم کورٹ کافیصلہ آنے تک درخواست نہیں سن سکتے“،سندھ ہائیکورٹ نے سٹیل ...
”سپریم کورٹ کافیصلہ آنے تک درخواست نہیں سن سکتے“،سندھ ہائیکورٹ نے سٹیل لیبریونین کی نجکاری کیخلاف درخواست نمٹا دی

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان سٹیل ملز کی نجکاری اور ملازمین کو نوکری سے نکالنے کے معاملے پر وفاقی حکومت نے سندھ ہائیکورٹ میں جواب جمع کرادیا،عدالت نے آبزرویشن دیتے ہوئے کہاکہ سپریم کورٹ کافیصلہ آنے تک درخواست نہیں سن سکتے ،اگروفاقی حکومت نے ملازمین نکالنے کافیصلہ کیا تو سپریم کورٹ سے رجوع کریں ۔عدالت نے پاکستان سٹیل لیبریونین (پاسلو)کی درخواست نمٹا دی

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں پاکستان سٹیل ملز کی نجکاری اور ہزاروں ملازمین کو نوکری سے نکالنے کے معاملے پر سماعت ہوئی، درخواست میں وفاقی حکومت وزارت پیداوار اوردیگر کو فریق بنایا گیا تھا،درخواست میں کہاگیا پاکستان سٹیل ملز کو اس حالت میں پہنچانے کے ذمہ دار ملازمین ہرگز نہیں ،ماضی کی حکومتوں کی غلط پالیسیوں سے سٹیل ملز کو خسارہ ہوا ،پی ٹی آئی حکومت نے بھی 2 سال میں سٹیل ملز چلانے کیلئے کوئی اقدام نہیں کیا،درخواست میں کہاگیا ہے کہ وفاقی حکومت سٹیل ملز نجی شعبے کودینا چاہتی ہے ،وفاقی حکومت کا ہزاروں ملازمین کو نکالنے کا غیرقانونی فیصلہ کیا ہے ،وفاقی حکومت کے اقدام کو غیرقانونی قرار دیا جائے ،وفاقی حکومت کو نجکاری اورملازمین نکالنے سے روکا جائے ۔وفاقی حکومت کی جانب سے سٹیل ملز ملازمین کو نکالنے کاجواب جمع کرادیاگیا۔

نمائندہ اٹارنی جنرل نے کہاکہ ملزم ملازمین کی سنیارٹی سے متعلق معاملہ سپریم کورٹ میں زیرسماعت ہے،سپریم کورٹ میں دوران سماعت ملز خسارے سے متعلق عدالت نے ریمارکس دیئے ،سپریم کورٹ کی آبزرویشن کے تحت حکومت نے ملازمین نکالنے کافیصلہ کیا۔

عدالت نے آبزرویشن دیتے ہوئے کہاکہ سپریم کورٹ کافیصلہ آنے تک درخواست نہیں سن سکتے ،اگروفاقی حکومت نے ملازمین نکالنے کافیصلہ کیا تو سپریم کورٹ سے رجوع کریں ۔عدالت نے پاکستان سٹیل لیبریونین (پاسلو)کی درخواست نمٹا دی۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -