گھر سے بھاگنے والی 14 سالہ لڑکی کے ساتھ دو روز تک اجتماعی جنسی زیادتی

گھر سے بھاگنے والی 14 سالہ لڑکی کے ساتھ دو روز تک اجتماعی جنسی زیادتی
گھر سے بھاگنے والی 14 سالہ لڑکی کے ساتھ دو روز تک اجتماعی جنسی زیادتی

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں گھر سے بھاگنے والی ایک 14سالہ لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا گیا۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق اس لڑکی کا تعلق ضلع پٹنہ سے تھا جس کے باپ نے پہلی بیوی کو طلاق دے کر دوسری شادی کر رکھی تھی۔ لڑکی کی سوتیلی ماں اسے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بناتی تھی جس پر وہ گھر سے بھاگ گئی۔ بھاگنے کے بعد اس کی ملاقات رینو دیوی نامی ایک 33سالہ خاتون سے ہوئی جو اسے اینٹوں کے بھٹے پر کام کا لالچ دے کر لے گئی۔

رپورٹ کے مطابق بھٹہ خشت پر رینو دیوی نے لڑکی کو کچھ اوباشوں کے حوالے کر دیا جو اسے دو دن تک جنسی زیادتی کا نشانہ بناتے رہے۔ تیسرے دن موقع پا کر لڑکی وہاں سے بھاگ نکلنے میں کامیاب ہو گئی اور مینر پولیس سٹیشن جا کر پولیس کو اس واردات کے متعلق بتایا۔ پولیس نے رینو دیوی اور 6مردوں سمیت 7لوگوں کو گرفتار کرکے ان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔ دیگر ملزمان میں 19سالہ باسو اراﺅن، 19سالہ پنٹو اوراﺅن، 19سالہ راجندر اوراﺅن و دیگر شامل تھے اور یہ تمام لوگ بھارتی ریاست جھاڑ کھنڈ سے تعلق رکھتے تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -