اپنی بیوی کی موت پر دلبرداشتہ ہو کر مرد نے اپنی زندگی بھی ختم کرلی

اپنی بیوی کی موت پر دلبرداشتہ ہو کر مرد نے اپنی زندگی بھی ختم کرلی
اپنی بیوی کی موت پر دلبرداشتہ ہو کر مرد نے اپنی زندگی بھی ختم کرلی

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) قدیم زمانے میں اگر کسی ہندو مرد کی موت ہو جاتی تو اس کی بیوی کو بھی اس کے ساتھ ہی ’ستی‘ کر دیا جاتا تھا۔ اس جدید دور میں بھارت میں شوہر کی اپنی بیوی کے ساتھ محبت کا ایک ایسا ہی واقعہ پیش آیا ہے کہ جہاں شوہر اپنی مرنے والی بیوی کے ساتھ جل مرنے کی خواہش میں اس کی چتا میں کود گیا۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ واقعہ بھارتی ریاست مہاراشٹر کے شہر چندر پور میں پیش آیا ہے۔ چندر پور کے رہائشی اس آدمی کا نام کشور کھاتک تھا جس کی رواں سال 19مارچ کو نواحی گاﺅں بنگرام ٹیلودھی کی رہائشی روچتا چیتاور نامی لڑکی کے ساتھ شادی ہوئی تھی۔

روچتا تین ماہ کی حاملہ تھی اور اپنی ماں کے بیمار ہونے کے سبب میکے گئی ہوئی تھی۔ کشور چند دن بعد اسے واپس لینے گیا جہاں اسے خبر ملی کہ اس کی بیوی لاپتہ ہو چکی ہے۔اسی روز شام کے وقت گاﺅں کے قریب واقع ایک کنویں سے روچتا کی لاش مل گئی۔ اس واقعے کو خودکشی قرار دے دیا گیا اور اس کی چتا جلانے کے لیے شمشان گھاٹ پہنچا دی گئی۔

کشور اپنی بیوی کے مرنے پر اس قدر دل گرفتہ تھا کہ جب اس روچتا کی چتا کو آگ لگائی گئی تو کشور نے بھی اس میں چھلانگ لگا دی لیکن پاس موجود لوگوں نے اسے بچا لیا۔ تاہم اس کا جسم کافی جل گیا۔ لوگ اسے کافی فاصلے پر لے گئے اور وہاں چھوڑ دیا۔ اس پر کشور نے دوڑ لگا دی اور جا کر اسی کنویں میں چھلانگ لگا دی جس میں ڈوب کر روچتا مری تھی۔ وہاں کشور کی بھی موت واقع ہو گئی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -