ایل ڈبلیو ایم سی میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال خوش آئند،احمد حسان

ایل ڈبلیو ایم سی میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال خوش آئند،احمد حسان

  

الاہور (جنرل رپورٹر) لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے اور شفاف نظام کی تشکیل کے لیے ادارے میں ٹیکنالوجی بیسڈ پروگرام متعارف کروائے جا رہے ہیں۔خواجہ احمد حسان کی زیر سرپرستی ایل ڈبلیو ایم سی اور پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے مابین ایم او یو پر دستخط کرنے کی تقریب منعقد ہوئی۔تقریب کا اہتمام ایوانِ وزیر اعلیٰ 90شاہراہ قائداعظم چیئر مین آفس میں کیا گیا۔سی ای او ایل ڈبلیو ایم سی رافعہ حیدر اورڈی جی ای گورننس پی آئی ٹی بی ساجد لطیف نے مفاہمتی یادداشت پر دستخط کیے۔ چیئرمین ایل ڈبلیو ایم سی خواجہ احمد حسان کا کہنا ہے کہ جدید ٹیکنالوجی کا استعمال جیسے اقدام شفاف نظام کی تشکیل کے لیے مدد گار ہو گا۔دور حاضر کے تقاضوں کے مطابق ٹیکنالوجی کے بہترین استعمال سے کمپنی مزید مستحکم ہو گی۔اینڈرائیڈ بیسڈ سسٹم سے ورکرز کی فیلڈ میں حاضری اور لوکیشن چیک کی جا سکے گی۔چیئرمین خواجہ احمد حسان نے جدید نظام کے بارے میں مزید تفصیل بیان کرتے ہوئے بتایا کہ ورکرز کی فیلڈ میں حاضری، ایمپلائی مینجمنٹ،آن لائن ٹرانسفر پوسٹنگ اور دیگر فیچرز کے ساتھ اینڈرائڈ بیسڈ سسٹم متعارف کروایا جائے گا۔

سی ای او ایل ڈبلیو ایم سی رافعہ حیدر کا کہنا ہے کہ ایک منعظم کامیاب صفائی نظام کے حصول کے لیے ادارے کو جدید ٹیکنالوجی سے ہم آہنگ کیا جا رہا ہے۔ادارہے کو جدید تقاضوں کے مطابق ڈیجیٹل کرتے ہوئے، ورکشاپس کے نظام کو خودکار اور شفاف بنانے کے لیے ویب ایپلی کیشن تیار کی گئی۔ اس ڈیجیٹل سسٹم کے ذریعے گاڑیوں کے نئے پرزہ جات کا ٹریک اینڈ ٹریس کیا جا رہا ہے۔حساس پوائنٹس کی نگرانی کے لیے ہاٹ اسپاٹ ایپلیکیشن اور الرٹ سسٹم تیار کیا گیاہے۔کارکردگی ایپ،خدمت آپ کی دہلیز“ایپ کو فعال رکھ کر شہریوں کو بہترین سروس فراہم کرنے کے لیے  لاہور کی تمام 274 یونین کونسلوں میں نافذکیا گیا۔ جبکہ ٹاسک مینجمنٹ ایپ کی مدد سے سٹاف کی کارکردگی کو مانیٹر کیا جا رہا ہے۔اب پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ سے معاہدے کا مقصد مانیٹرنگ نظام کو مزید مربوط کرنا ہے تاکہ نظام میں موجود کسی بھی قسم کی بے ضابطگی اور کوتاہی نظر انداز نہ کی جائے۔ادارے کی کارکردگی کو مزید بہتر بنانے کے لیے ایل ڈبلیو ایم سی کا ملازمین کی حاضری چیک کرنے کیلئے جدید نظام متعارف کروانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -