محکمہ مسلم اوقاف ترمیم شدہ ایکٹ کیخلاف احتجاجی کیمپ

محکمہ مسلم اوقاف ترمیم شدہ ایکٹ کیخلاف احتجاجی کیمپ

  

پشاور(سٹی رپورٹر)محکمہ مسلم اوقاف کی جانب سے ترمیم شدہ ایکٹ کے خلاف کرایہ داران نے باقاعدہ احتجاج کا آغاز کر لیا گزشتہ روز مرکزی تنظیم تاجران خیبرپختونخوا کے صدر ملک مہر الہی کی زیر صدارت پہلا احتجاجی کیمپ ڈبگری چوک لگایا گیا جس میں پشاور چیمبر کے صدر خالد فاروق ملک، سینئر وائس پریذیڈینٹ حاجی وحید، سابقہ صدر پشاور چیمبر شکیل احمد صراف، سیکرٹری اطلاعات مرکزی تنظیم شہزاد احمد صدیقی اوردیگر اضلاع کے تاجران سمیت مختلف بازاروں کے صدور نے شرکت کی۔اس موقع پر شرکا کا کہنا تھا کہ محکمہ مسلم اوقاف کے ترمیمی ایکٹ کے حوالے سے جو تحفظات ہیں اور کمیٹی کے فیصلے کے مطابق محکمے کے خلاف بازاروں میں بطور پر امن تاجر ہونے کا ثبوت دیتے ہوئے احتجاجی بینرز آویزاں کئے گئے مگر دوسری جانب صوبائی حکومت کے ذمہ داران کی تاجروں کے معاشی قتل پر خاموش تماشائی بن کر بیٹھے تماشا کرنا تاجروں کے جذبات پر جلتی آگ پر تیل چھڑکنے کے مترادف تھا جس پر پہلا احتجاجی کیمپ دبگڑی میں لگایا گیا ہے اگر ایکٹ پر نظر ثانی نہ کی گئی تو احتجاج کا دائرہ کار بڑھایا جائے گا احتجاجی کیمپ میں عوامی نیشنل پارٹی کی ثمر بلور، قومی وطن پارٹی کے سکندر شیرپا اور سابق ناظم اعلی اعظم خان سمیت دیگر سیاسی رہنماؤں نے شرکت کر کے مسلم اوقاف ایکٹ کی بھر پور مذمت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -