سندھ ہائیکورٹ نے ڈاکٹر عامر لیاقت کی قبر کشائی اور پوسٹ مارٹم کا حکم معطل کر دیا

سندھ ہائیکورٹ نے ڈاکٹر عامر لیاقت کی قبر کشائی اور پوسٹ مارٹم کا حکم معطل کر ...

  

      کراچی (سٹاف رپورٹر) سندھ ہائی کورٹ نے ڈاکٹر عامر لیاقت نے مقامی جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت کی جانب سے جاری کردہ قبر کشا ئی کا حکم معطل کرتے ہوئے سیکرٹری صحت اور میڈیکل بورڈ کو نوٹس جاری کردیئے،جبکہ مزید سماعت 29 جون تک ملتوی کردی،جو ڈیشل مجسٹریٹ کی جانب سے ڈاکٹرعامر لیاقت کی قبر کشائی اور پورسٹمارٹم کا حکم مرحوم کے اہل خانہ نے چیلنج کیا تھا۔یادر ہے جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں شہرقائد کے مقامی شہری نے درخواست دائر کی تھی کہ ڈاکٹرعامر لیاقت کی موت مشکوک ہے،ان کی قبرکشائی کرکے پورسٹمارٹم کا حکم دیا جائے، جوڈیشل مجسٹریٹ ایسٹ نے سماعت کے بعد درخواست منظور کرتے ہوئے میڈیکل بورڈ تشکیل دینے اور قبرکشائی کر کے پوسٹمارٹم کا حکم جاری کر دیا، تاہم دوسری جانب مرحوم ڈاکٹر عامر لیاقت کے اہل خانہ نے جوڈیشل مجسٹریٹ کا حکم سندھ ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا اوردرخوا ست میں موقف اپنایا کہ آج بھی اس بات پر قائم ہیں کہ عامر لیاقت کا پوسٹمارٹم نہیں ہونا چاہیے کیونکہ اس سے انکی لاش کی بے حرمتی ہوگی اور مرحوم کی روح کوتکلیف پہنچے گی، لہٰذا استدعا ہے جوڈیشل مجسٹریٹ کا حکم کالعدم قرار دیا جائے کیونکہ انہوں نے اپنے دائرہ اختیار کا غلط استعمال کیا ہے۔ گذشتہ روز سندھ ہائیکورٹ میں سماعت شروع ہوئی توعدالت عالیہ نے درخواست گزار کے وکیل ضیاء اعوان کو ضابط فوجداری کی سیکشن 175 پڑھنے کی ہدایت کی۔وکیل نے موقف اختیارکیا کہ تمام قانونی تقاضے پورے کرنے کے بعد ڈاکٹرعامر لیاقت کی تدفین کی گئی، جوڈیشل مجسٹریٹ ا یسٹ کا فیصلہ غیرقانونی ہے معطل کیا جائے، عدالت عالیہ نے جوڈیشل مجسٹریٹ ایسٹ کے فیصلے کو معطل کرتے ہوئے 29 جون تک عملدرآمد روک دیا، فاضل عدالت نے میڈ یکل بورڈ اور دیگرفریقین کوآئندہ سماعت تک نوٹس بھی جاری کردئیے۔

پوسٹمارٹم حکم معطل

مزید :

صفحہ اول -