پیپلز پارٹی کا 26مارچ سے حکومت مخالف ٹرین شروع کرنے کا اعلان

پیپلز پارٹی کا 26مارچ سے حکومت مخالف ٹرین شروع کرنے کا اعلان

کراچی (اسٹاف رپورٹر)حکومت مخالف ٹرین مارچ بلاول بھٹوکی قیادت میں 26 مارچ کو کراچی سے شروع ہوگا اس بات کا فیصلہ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کی زیرصدارت کراچی میں ہونے والے اہم اجلاس کیا گیا، اجلاس میں ٹرین مارچ کی تیاریوں اور دیگرامور کاجائزہ لیا گیا.اجلاس میں بتایا گیا کہ پیپلزپارٹی نے وفاقی حکومت کیخلاف احتجاجی ٹرین مارچ کی تیاریاں مکمل کر لی ہیں، پیپلزپارٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ ٹرین مارچ کا آغاز کراچی سے اور اختتام سرشاہنواز بھٹو ریلوے اسٹیشن پرہوگا۔وزارت ریلوے نے بھی بلاول بھٹو کے ٹرین مارچ کے لئے ٹرین کی منظوری دی ہے، ٹرین مارچ 26مارچ کو کراچی سے شروع ہوگا اور احتجاجی ٹرین 2 دن میں کراچی سے لاڑکانہ پہنچیگی، پی پی کی تمام اضلاع میں ٹرین مارچ کے لئے رہنماں اور کارکنان کوہدایات جاری کردی گئی ہیں۔ علاوہ ازیں وزیر بلدیات سندھ اور صدر پاکستان پیپلز پارٹی کراچی ڈویژن سعید غنی کی زیر صدارت ڈسٹرکٹ اور ڈویژنز کے صدور، جنرل سیکرٹریز اور ذیلی تنظیموں کے عہدیداروں کے اجلاس میں پیپلزپارٹی سندھ کے جنرل سیکریٹری وقار مہدی. نائب صدر سندھ راشد حسین ربانی، کراچی ڈویژن کے جنرل سیکرٹری جاوید ناگوری، خواتین ونگ کی جنرل سیکرٹری شاہینہ شیر علی، ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات آصف خان، نائب صدر سردار خان، تمام ڈسٹرکٹ کے صدور. پیپلز لیبر ونگ کے صدر اسلم سموں، کے ایم سی میں اپوزیشن لیڈر کرم اللہ وقاصی سمیت دیگر شریک ہوگئیاجلاس میں 26 مارچ سے شروع ہونے والے ٹرین مارچ، 4 اپریل کو شہید ذوالفقار علی بھٹو کی برسی سمیت دیگر امور کوحتمی شکل دی گئی۔اجلاس میں نیب کی جانب سے پارٹی قیادت کے خلاف جاری سیاسی انتقامی کارروائیوں کے حوالے سے بھی تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا.اجلاس میں اس عزم کا تہیہ کیا گیا کہ پارٹی چئیرمین اور اعلی قیادت کے خلاف جاری میڈیا ٹرائل اور اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے ان کی کردارکشی کی سازشوں کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا بلاول بھٹو کی قیادت میں ٹرین مارچ نئی تاریخ رقم کرے گا اجلاس میں بلاول بھٹو کی احتجاجی ٹرین کے مختلف اسٹیشنز پر مختصر قیام اور چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کے کارکنان سیخطاب کے شیڈول کوبھی حتمی شکل دی گئی۔

مزید : کراچی صفحہ آخر