آپ ؐ کی زندگی مصائب و آلام سے گھری ہوئی تھی،مولانا عبدالرحمن سلفی

  آپ ؐ کی زندگی مصائب و آلام سے گھری ہوئی تھی،مولانا عبدالرحمن سلفی

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)امیر جماعت غرباء اہلحدیث پاکستان مولانا عبدالرحمن سلفی نے معراج النبیؐ اور یوم استقلال 23مارچ کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سرور کونین حضرت محمد ؐ کی زندگی مصائب و آلام سے گھری ہوئی تھی مگر آپؐ کا ایک لمحے کیلئے بھی مایوس نہیں ہوئے بلکہ رب کائنات کی وحدانیت اور پیغام ربانیت کو عام کرنے کیلئے ہمہ وقت سرگرم عمل رہے، کیونکہ آپؐ کو یقین محکم تھا کہ دین فطرت ایک روز تمام ادیان باطلہ پر غالب آکر رہے گا۔ مولانا سلفی نے کہا کہ معراج النبی ؐ وہ حقیقت ہے جسے رب تعالیٰ نے قرآن مجید کے سنہرے اوراق میں محفوظ کردیا اور قیامت کی دہلیز تک اس کی حقانیت اور اس سفر کے دوران آپؐ کو جو حقیقتیں آشکار ہوئیں ان کا تذکرہ قرآن مجید میں واضح الفاظ میں کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ قمری سال کے 12مہینوں میں اسلامی واقعات اور معجزات رونما ہوتے رہے لیکن عزت و حرمت، شوکت و حشمت اور رفعت و عظمت کے اعتبار سے رجب ایسا عظیم الشان مہینہ ہے جس میں آمنہ کے لعل رحمت للعالمین محمد ؐ ذات بالا صفات کو رب کائنات نے عرش بریں پر اپنا مہمان بنایا اور امام کائنات کو تمام پیغمبران دین کی امامت کروانے کا شرف بخشا اور تمام عبادتوں کی سرتاج عبادت نماز کا تحفہ بھی دیا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں چاہیے کہ حضرت محمد ؐ کے ہر ہر عمل کو اپنی زندگی کا محور و مرکز بنالیں تو ہماری دنیاوی اور ابدی زندگی کامیاب ہوسکتی ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر