کورونا وائرس کے باعث شہر قادئد میں سڑکوں پر سناٹے کا راج، کاروبار زندگی معطل

  کورونا وائرس کے باعث شہر قادئد میں سڑکوں پر سناٹے کا راج، کاروبار زندگی ...

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)شہرقائدمیں کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے لاک ڈاؤن اور دیگر حکومتی اقدامات کے نتیجے میں کاروبار زندگی معطل ہوگیا اور عوام کی اکثریت گھروں تک محدود ہوکر رہ گئی۔سرکاری احکامات پر عمل درآمد کے لیے کراچی سمیت سندھ بھر میں مارکیٹیں،تفریحی و تجارتی سرگرمیاں معطل رہیں۔سندھ کے تمام شہروں میں چھوٹے بڑے بازار، شاپنگ مالز، تفریحی گاہیں اور پارکس بند رہے جبکہ ساحلی مقامات جانے پر پابندی تھی۔احتیاطی اقدامات کے تحت پبلک ٹرانسپورٹ بھی بند رہی جس کے باعث سڑکوں سے ٹریفک مکمل غائب اور شاہراہوں پر سناٹے کا راج رہااورشہری گھروں میں محصور ہوکر رہ گئے۔مجبوری کی حالت میں گھر سے باہر نکلنے والے شہریوں نے بتایاکہ کام پر نہیں جائیں گے تو گھر کے چولھے ٹھنڈے ہوجائیں گے تاہم شہرمیں صرف کھانے پینے کی اشیاء کی دکانیں اور میڈیکل اسٹورز کھلے رہے۔متحدہ علما بورڈنے شب معراج کے موقع پر انفرادی عبادات کی اپیل کرتے ہوئے کہا تھا کہ لوگ اس وبا سے نجات کیلئے استغفار، درود شریف، آیت کریمہ کا ورد کریں، جبکہ گھروں میں قرآن کریم کی تلاوت اور ذکر و اذکار کا اہتمام کیا جائے۔کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ریلوے اسٹیشنز، اسپتالوں اور بس اڈوں پر میونسپل عملے کی جانب سے اسپرے بھی کیاگیا۔شہرقائد میں آج(پیر)23مارچ کوگورنرز ہاؤس میں یوم پاکستان کے موقع پر قومی اعزازات کی تقریب منسوخ کردی گئی ہے۔ یہ تقریب صورتحال بہتر ہونے پر منعقد کی جائے گی۔دوسری جانب سندھ ہائی کورٹ نے عدالت عالیہ اور ضلعی عدالتوں میں سول مقدمات کی سماعت تاحکم ثانی معطل کردی اور اب صرف فوجداری مقدمات اور ضمانتوں کی درخواستیں ہی سنی جائینگی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر