ڈبلیو ایس ایس پی نے کلورین سلوشن سپرے شروع کر دیا

ڈبلیو ایس ایس پی نے کلورین سلوشن سپرے شروع کر دیا

  



پشاور (سٹاف رپورٹر) واٹر اینڈ سینی ٹیشن سروسز پشاور (ڈبلیو ایس ایس پی) نے کورونا وائرس سے لوگوں کے بچاؤ کے لئے کلورین سلوشن سپرے کا آغاز کر دیا،سڑکوں کی دھلائی جبکہ مختلف علاقوں میں جراثیم کش سپرے کیا جارہا ہے وائرس کا ممکنہ پھیلاؤ روکنے کے لئے محفوظ طریقے سے کوڑا کرکٹ اور گندگی کو ٹھکانے لگانے کے لئے اضافی ضروری آالات کا بندوبست اور ڈمپنگ سائٹ میں کوڑا کرکٹ کے لئے علیحدہ جگہ مختص کر دی ہے۔ اتوار کے روز ڈبلیو ایس ایس پی کی خصوصی ٹیمیں کورونا کے خلاف سارا دن مصروف رہیں کلورین سلوشن سپرے کے لئے ڈبلیو ایس ایس پی کی مخصوص گاڑیاں منی واٹر باؤزر استعمال کی جارہی ہیں قبل ازیں چاروں زونز میں عملے کی تربیت کی گئی اور اسے حفاظتی آلات (پی پی ایز) فراہم کئے گئے، شہری خدمات فراہم کرنے والے عملے کے لئے بھی پی پی ایز کا بندوبست کیا گیا ہے جبکہ آئندہ دنوں کی ضروریات پوری کرنے کے لئے مزید حفاظتی آلات خریدے جارہے ہیں۔ خصوصی ٹیموں نے یونیورسٹی، ورسک، ناصر باغ، رنگ، عمر گل روڈز، دوران پورقرنطینہ، بشیر آباد اور شہر کی دیگر سڑکوں پر کلورین سلوشن سپرے کیا رات کے وقت بھی سپرے کیا جا رہا ہے علاوہ ازیں کوڑا دانوں اور ڈمپنگ سائٹ پر مسلسل سپرے کیا جارہا ہے تاکہ وائرس کا ممکنہ پھیلاؤ روکا جاسکے،جن علاقوں سے کورونا وائرس کے کیس رپورٹ ہوئے ہیں وہاں خصوصی توجہ مرکوز کی گئی ہے کینال ٹاون میں دو بار سپرے کیا گیا ہے۔ آبادی میں سپرے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر حکمت عملی تیار کی جارہی ہے، قرنطینہ سنٹرز سے آنے والے کوڑا کرکٹ کو محفوظ طریقے سے تلف کرنے کے لئے حکومت اور محکمہ صحت سے رہنمائی لینے کے لئے رابطہ کرلیا گیا ہے۔ ڈمپنگ سائٹ سے غیر متعلقہ افراد کو دور رکھنے کے لئے اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔ چیف ایگزیکٹو آفیسر سید ظفر علی شاہ کلورین سلوشن سپرے مہم اور معمول کی شہری خدمات فراہمی کے عمل کی خود نگرانی کر رہے ہیں عملے کا تحفظ یقینی بنانے کے لئے سخت ہدایات جاری کر دی ہیں جبکہ آپریشنل عملہ جی ایم آپریشنز ریاض احمد خان کی سربراہی میں فیلڈ میں ہمہ وقت مانیٹرنگ اور خدمات سر انجام دے رہا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر