ممکنہ لاک ڈاؤن، حکومتی احکامات پر سختی سے عملدر آمد کیا جائے: عائشہ ابڑو

ممکنہ لاک ڈاؤن، حکومتی احکامات پر سختی سے عملدر آمد کیا جائے: عائشہ ابڑو

  



حیدرآباد(بیورورپورٹ)ڈپٹی کمشنر حیدرآباد عائشہ ابڑو نے متعلقہ افسران کو ہدایت کی ہے کہ کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے حکومت سندھ کی طرف سے ممکنہ لاک ڈاؤن کی صورت میں حکومت کی ہدایات پر سختی سے عملدرآمد کرانے کیلئے اپنا مؤثر کردار ادا کریں، پانچ لوگوں سے زیادہ لوگوں کے اکٹھا ہونے پر عائد پابندی پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے۔وہ کورونا وائرس سے بچاؤ کے حوالے سے کئے گئے انتظامات کا جائزہ لینے کے سلسلے میں متعلقہ افسران سے شہباز ہال حیدرآباد میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کر رہی تھیں، ڈی سی عائشہ ابڑو نے حیدرآباد کے تمام اسسٹنٹ کمشنرز کو ہدایت کی کہ وہ اپنے اپنے علاقوں کی مساجد سے کورونا وائرس کے حوالے سے آگاہی اعلان کرانے کیلئے تعلقوں کے مذہبی اور سماجی رہنماؤں سے اجلاس کریں کیونکہ موجودہ صورتحال میں مذہبی علماء اور سماجی رہنماؤں کا کردار انتہائی اہم ہے، انہوں نے اجلاس کو بتایا کہ ممکنہ لاک ڈاؤن کی صورت میں عوامی خدمات کی فراہمی کے اداروں کے ساتھ ساتھ کریانہ اور میڈیکل اسٹورز پابندی سے مستثنیٰ ہوں گے، انہوں نے متعلقہ افسران کو یہ بھی ہدایت کی کہ شہر میں پانچ لوگوں سے زیادہ لوگوں کے اکٹھا ہونے پر عائد پابندی پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں، انہوں نے اجلاس میں فروٹ منڈی کی منتقلی سے متعلق اسسٹنٹ کمشنر فراز احمد صدیقی سے آگاہی لی، اسسٹنٹ کمشنر نے بتایا کہ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے کیے گئے فیصلوں پر عملدرآمد کیا جا رہا ہے اور موجودہ سبزی منڈی سے فروٹ منڈی کو نیو سبزی منڈی کی جانب منتقل کیا گیا ہے جہاں تجارتی سرگرمیاں شروع ہو چکی ہیں، انہوں نے تعلقہ دیہی کے اسسٹنٹ کمشنر سرہان ابڑو سے مویشی منڈی سے متعلق کیے گئے فیصلے پر عملدرآمد کے حوالے سے معلوم کیا جس پر اے سی نے بتایا کہ آئندہ منگل سے مذکورہ فیصلے پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے گا اور اب مویشی منڈی ایک دن کے بجائے ہفتے میں چار دن لگائی جائیگی تاکہ عوام کے رش کو کم سے کم کیا جا سکے، اس حوالے سے مویشی منڈی میں مطلوبہ احتیاطی اقدامات بھی اختیار کیے گئے ہیں، ڈپٹی کمشنر نے اسسٹنٹ کمشنر سٹی اورقاسم آبادکو بھی اپنے اپنے تعلقوں میں ہیلتھ ایڈوائزری پر عملدرآمد کرانے کی ہدایت کی، محکمہ صحت کے افسران نے اجلاس کو آئیسولیشن وارڈ اور قرنطینہ مراکز پر سہولتوں سے متعلق تفصیلی آگاہ کرتے ہوئے اپیل کی کہ عوام الناس میں کورونا وائرس کے حوالے سے آگاہی کو فروغ دینے کیلئے مؤثر اقدامات اختیار کیے جائیں جس پر ڈپٹی کمشنر حیدرآباد نے متعلقہ افسران سے کہا کہ لوگوں میں سماجی مفاصلہ رکھنے اور خود کو گھروں تک محدود رکھنے اور صفائی سمیت اپنے ہاتھ بار بار دھونے سے متعلق شعور بیدار کریں۔ایس ایس پی حیدرآباد عدیل حسین چانڈیو نے کہا کہ کورونا وائرس کسی مخصوص زبان، مذہبی فرقہ یا سیاسی پارٹی کیلئے نہیں بلکہ پوری انسانیت کیلئے خطرہ بن کر سامنے آیا ہے جس کی وجہ سے دنیا کے کئی ممالک اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اگر عام لوگ محکمہ صحت اور یونیسیف کی بتائی گئی ہیلتھ ایڈوائزری پرعملدرآمد نہیں کرینگے تو یہ مسئلہ سنگین صورتحال اختیار کر سکتا ہے جس کیلئے ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم سب سنجیدگی کا مظاہر کرتے ہوئے حکومت کے ساتھ تعاون کریں اور خود کو حکومت کی ہدایت کے تحت گھروں تک محدود رکھیں تاکہ ہم اور ہمارے بچے اس وبا سے محفوظ رہ سکیں، اس موقع پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ون حیدرآباد لیاقت علی کلہوڑو، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ٹو قائم اکبر نیمائی، ڈی ایچ او حیدرآباد ڈاکٹر مسعود جعفری اور دیگر متعلقہ افسران بھی موجود تھے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر