تمام ممالک،مرکزی بینک مربوط اقدامات کریں،کرونا وباء کے معیشت پر اثرات عارضی نوعیت کے ہونگے:آئی ایم ایف،بحران سے نکلنے کا راستہ نکال لینگے:سربراہ فنڈز اسٹریٹجی مارٹن موہیلسن

تمام ممالک،مرکزی بینک مربوط اقدامات کریں،کرونا وباء کے معیشت پر اثرات عارضی ...

  



اسلام آباد(خصوصی رپورٹ) آئی ایم ایف نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں کرونا وائرس کے اثرات عالمی معیشت پر یقینی طور پر سخت ہوں گے تاہم امید ہے کہ ہم آئندہ ماہ تک اس سے نکلنے کا راستہ نکال لیں گے تاہم اس کے اثرات عارضی نوعیت کے ہوں گے،اس وبا کے نتیجے میں پیدا شدہ صورتحال سے نمٹنے کے لیے مربوط اقدامات کی ضرورت ہے۔آئی ایم ایف کے شعبہ فنڈ اسٹریٹجی اور ری ویو کے سربراہ مارٹن موہلیسن نے گزشتہ روز ایک انٹرویو میں کہا کہ کرونا وائرس کے عالمی معیشت پر شدید اثرات مرتب ہوں گے لیکن ان سے نمٹنے کے لیے متعلقہ حکومتوں یا مرکزی بینکوں کو مربوط اقدامات کرنے ہوں گے۔ان کا کہنا تھا کہ ہم کرونا بحران کا شکار ہوچکے لیکن عالمی معیشت پر اس کا بہت کم اثر پڑا ہے جس کی وجہ مستحکم معیشت اور روزگار کی نسبتاً بہتر شرح ہے۔یہ بحران ایسے وقت میں آیا جب ہم اس طرح کے جھٹکے کے قابل ہوچکے ہیں۔

آئی ایم ایف

مزید : صفحہ اول