سپیکر قومی اسمبلی کا شہباز شریف کو فون،کرونا سے متعلق پارلیمانی کمیٹی پر مشاورت

  سپیکر قومی اسمبلی کا شہباز شریف کو فون،کرونا سے متعلق پارلیمانی کمیٹی پر ...

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، نیوز ایجنسیاں) اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے قائد حزب اختلاف قومی اسمبلی میاں محمد شہباز شریف کو وطن واپس پہنچنے پر ان سے ٹیلیفونک رابطہ کیا ہے۔ انہوں نے قائد حزب اختلاف کو وطن واپس پہنچنے اور مشکل کی اس گھڑی میں تمام سیاسی قیادت کے ساتھ ملکر کورونا وائرس کے خلاف جدوجہد جہد کرنے کو سراہا۔سپیکر قومی اسمبلی اور اپوزیشن لیڈر کے مابین ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ اور اسے کے معیشت پر مرتب ہونے والے معاشی اثرات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اسپیکر نیکورونا وائرس پر پارلیمانی کمیٹی کے قیام سے متعلق اپوزیشن لیڈر کو آگاہ کیا۔انہوں نے کہاں کہ کمیٹی حکومت کے اقدامات پر نظر رکھے گی اور اپنی تجاویز مرتب کر کے حکومت کو بھیجے گی۔انہوں نے کہا کہ ہماری سیاسی قیادت نے ہمیشہ قومی ایشوز پر متحد ہو کر سیاسی بالغ نظری کا ثبوت دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں متحد ہو کر اپنی قوم کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑا ہونا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ ملک اس وقت ایک مشکل دور سے گزر رہا ہے، اس موقع پر سیاسی قیادت کا یکجا ہو کر اپنا بھرپور کردار ادا کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی میاں محمد شہباز شریف نے مشکل کی اس گھڑی میں سیاسی قیادت کو یکجا کرنے پر اسپیکر کی کوششوں کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس عالمی وبا ہے اس سے نمٹنے کے لیے ہمیں سیاست سے بالاتر ہو کر سوچنے کی ضرورت ہے۔ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ہمیں ہر قدم سوچ سمجھ کر اٹھانا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس نے جہاں ہزاروں انسانی زندگیوں کو لقمہ اجل بنایا ہے وہاں عالمی معیشت کو بھی شدید دھچکا پہنچایا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک کو پہلے سے معاشی چیلنجز کا سامنا ہے اس لیے ہمیں کورونا وائرس کے ساتھ ساتھ اس وبا سے معیشت پہنچنے والے نقصان کے ازالے کے لیے بھی مشترکہ لائحہ عمل اپنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو احتیاطی تدبیر پر عمل کرنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ مشکل حالات میں بروقت فیصلے کرنے ہونگے۔ انہون نے اس عزم کا اظہار کیا کہ قوم پر جب بھی مشکل وقت آیا ہے تو تمام سیاسی قیادت ثابت قدم ہو کر قوم کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ر ہی ہے۔

اسد قیصر

کراچی(سٹاف رپورٹر،آئی این پی)متحدہ قومی متحدہ قومی مومنٹ (پاکستان)نے وفاقی کابینہ میں دوبارہ واپسی کا اعلان کردیا ہے، فیصل سبزواری اورامین الحق کابینہ کاحصہ بنیں گے،امین الحق وزیر جبکہ فیصل سبزواری مشیر ہوں گے تفصیلات کے مطابق اتوار کو ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے گورنر سندھ عمران اسماعیل سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایم کیوایم وفاقی کابینہ میں دوبارہ شمولیت اختیار کرنے جارہی ہے، فیصل سبزواری اورامین الحق کابینہ کاحصہ بنیں گے،امین الحق وزیر جبکہ فیصل سبزواری مشیر ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ ہم پی ٹی آئی حکومت کے کے اتحادی ہیں، امید ہے پی ٹی آئی اور متحدہ کا اتحاد پاکستان اور سندھ کیلئے یادگار ثابت ہوگا،تقریبا تمام مطالبات تکمیل کے مراحل میں آگئے ہیں۔ گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا کہ اس وقت انفارمیشن ٹیکنالوجی (آئی ٹی) جس کے خالد مقبول صدیقی وفاقی وزیر ہیں، کی وزارت کوخالی رکھنا ممکن نہیں تھا، ایم کیوایم کے مطالبات پورے کرنے کیلئے وزیراعظم نے ہدایت دی تھی، سندھ کے شہری علاقوں سے متعلق جو مطالبات رکھے گئے وہ ہماری ترجیح بھی تھے، ایم کیوایم پہلے دن سے حکومت کاحصہ ہے۔گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کہا کہ ایم کیوایم اور پی ٹی آئی دونوں جماعتیں سندھ کی بہتری چاہتی ہیں۔ میئر کراچی کو بااختیار ہونا چاہیے، جس میئر کے پاس اختیارات نہ ہوں وہ کام کیسے کرسکتا ہے، ایم کیوایم کے ساتھ ملکر ہم نے ملک اور صوبے کی بہتری کیلئے کام کرناہے۔ایک سوال کے جواب میں گورنرسندھ نے کہا کہ سندھ میں لاک ڈاون کے فیصلے پر تمام جماعتیں متفق ہیں،وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے ایم کیو ایم کے کابینہ میں واپسی کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشکل کی اس گھڑی میں ہم سب ایک ہیں، قوم نے یکجا ہوکر کرونا کے چیلنج کا مقابلہ کرنا ہے،ایم کیوایم کی کابینہ میں شمولیت کراچی کے شہریوں کی بہتری کیلئے حکومتی کاوشوں کو تقویت دے گی۔اتوار کو اپنے ٹوئٹر پیغام میں وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ایم کیو ایم کا کابینہ میں واپسی کا فیصلہ لائق تحسین ہے،

متحدہ واپسی

مزید : صفحہ اول