کرونا احتیاطی تدابیروں پر سختی سے عملدرآمد کرنا ہوگا،جام کمال خان

کرونا احتیاطی تدابیروں پر سختی سے عملدرآمد کرنا ہوگا،جام کمال خان

  



ڈیرہ اللہ یار(این این آئی)وزیراعلیٰ بلو چستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے احتیاطی تدابیروں پر سختی سے عملدرآمد کرنا ہوگا، کرونا وائرس بہت بڑی آفت ہے معمولی غلطی سے آفت پھیل گئی تو اس کو کنٹرول کرنا بس سے باہر ہوگا،ہمارے صحت کے شعبے اتنے مستحکم نہیں ہیں تاہم دستیاب وسائل میں رہتے ہوئے وبا کی روک تھام کے لیے بھرپور کوششیں جاری ہیں۔ڈیرہ اللہ یار میں چار روز میں قائم قرنطینہ سینٹر کے دورہ کے دوران صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ جام کمال خان نے کہاکہ یہ تاثر سراسر غلط ہے کہ کرونا وائرس صرف ایران سے آنے والے زائرین کے ذریعے پھیل جائیگا۔ گزشتہ 20 روز میں بیرون ممالک سے 9 لاکھ افراد پاکستان آئے ہیں یہ افراد ان ممالک سے آئے ہیں جہاں کرونا وائرس کے زیادہ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ بیرون ممالک سے آنے والے تمام افراد کی اسکریننگ کی جائے اور احتیاطی طور پر آنے والوں کو 14 روز تک قرنطینہ سینٹر میں رکھا جائے۔ ابتدائی طور پر کوئٹہ میں جزوی لاک ڈاون کا فیصلہ کیا گیا لاک ڈاون کی انحرافی کرنے پر سختی کی جائے گی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ لاک ڈاون کی صورت میں ڈیلی ویجز کے مزدور ضرور متاثر ہونگے تاہم ڈیلی ویجز پر کام کرنے والے مزدوروں کی دس روز میں رجسٹریشن مکمل کرکے کم از کم ان کو دو ماہ کے لیے راشن پیکج دیا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ قرنطینہ سینٹر فنکشنل ہونے کے بعد محکمہ صحت کو ٹیسٹنگ کٹس این 95 ماسک گاون ودیگر ضروری آلات و سہولیات آئندہ چند روز میں فراہم کیے جائیں گے۔

جام کمال خان

مزید : صفحہ اول