دارالصحت ہسپتال کی مبینہ غفلت سے جاں بحق ہونے والی ننھی نشوا کے والد اور ہسپتال انتظامیہ کے درمیان معاہدہ طے پا گیا

دارالصحت ہسپتال کی مبینہ غفلت سے جاں بحق ہونے والی ننھی نشوا کے والد اور ...
دارالصحت ہسپتال کی مبینہ غفلت سے جاں بحق ہونے والی ننھی نشوا کے والد اور ہسپتال انتظامیہ کے درمیان معاہدہ طے پا گیا

  


کراچی(ویب ڈیسک) دارالصحت ہسپتال کی مبینہ غفلت سے متاثر ہونے والی ننھی نشوا کے والد قیصر علی اور اسپتال انتظامیہ کے درمیان معاہدہ طے پاگیا اسپتال انتظامیہ نے نشوا کے والد کی شرائط قبول کرلیں نشوا کے والد نے مقدمہ واپس لینے کے لیے رضامندی ظاہر کردی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی پریس کلب میں دارلصحت ہسپتال کی مبینہ غفلت کے باعث غلط انجکشن لگنے سے ہلاک ہونے والی ننھی نشوا کے لواحقین کی جانب سے پریس کانفرنس منعقد کی گئی، کانفرنس میں نشوا کے والد قیصر علی، نشوا کیس کے وکیل منیر احمد اور دیگر بھی موجود تھے، کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نشوا کے والد قیصر علی نے کہا کہ نشوا کی ہلاکت کے معاملے پر ہمارے تین مطالبات تھے جس پر ہم پہلے دن سے لڑ رہے تھے، تین مطالبات میں ہسپتال سیل کرنے، ہسپتال انتظامیہ کو گرفتار کرنے اور ان لائسنس ہسپتال کے خلاف انکوائری کمیشن بنانے کے مطالبات شامل تھے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق انہوں نے کہا کہ ہسپتال انتظامیہ اور ہمارے درمیان معاہدہ طے پا گیا ہے، اسپتال انتظامیہ کے سامنے تین مطالبات رکھے تھے جس پر ہسپتال انتظامیہ کی منظوری کے بعد معاہدہ طے ہوا ہے اور سب کو اللہ کی رضا کے لیے معاف کردیا ہے، اور اسی معاہدے کی بنا پر بیان ریکارڈ کروایا ہے، ہمارے ہسپتال کو پیش کیے مطالبات میں پہلا مطالبہ نشوا کے نام سے دارالصحت ہسپتال میں پیڈس آئی سی یو بنایا جائے، نشوا فائونڈیشن بنایا گیا ہے جس میں ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے سالانہ50 لاکھ روپے دیے جائیں گے اور فاؤنڈیشن کو رجسٹرڈ بھی کرالیا ہے، جمع کیے گئے فنڈ سے ان کا علاج کیا جائے گا جو نشوا کی طرح دوسرے ہسپتالوں کی غفلت سے متاثر ہوں گے، ہسپتال انتظامیہ سالانہ دو بچوں کو اسکالر شپ دی جائیگی۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی